1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

پاکستان کے ساتھ تعلقات پر نظر ثانی کی ضرورت ہے، امریکی جنرل

افغانستان میں تعینات امریکی اور بین الاقوامی افواج کے امریکی کمانڈر نے کہا ہے کہ امریکا کے پاکستان کے ساتھ تعلقات پر ’’مکمل نظرثانی‘‘ کی ضروت ہے۔

امریکی جنرل جان نکلسن نے امریکی سینیٹ کی آرمڈ سروسز کمیٹی کو بتایا کہ امریکا کے پاکستان کے ساتھ پیچیدہ تعلقات کا اندازہ مکمل نظرثانی سے لگایا جا سکتا ہے۔ امریکی کمانڈر کا کہنا تھا کہ پاکستان طالبان کی حمایت اور افغان حکومت کو کمزور کرنے کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے ہے۔

خبر رساں ادارے روئٹرز کے مطابق امریکا نے حالیہ برسوں کے دوران پاکستان کے لیے فوجی اور اقتصادی امداد میں کمی کر دی ہے جس کی ایک وجہ ایٹمی طاقت رکھنے والے ملک پاکستان کی طرف اپنے ہمسایہ ملک افغانستان میں سرگرم طالبان کو سپورٹ کرنا ہے۔

Afghanistan Taliban Kämpfer (Getty Images/AFP/J. Tanveer)

امریکی کمانڈر کا کہنا تھا کہ پاکستان طالبان کی حمایت اور افغان حکومت کو کمزور کرنے کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے ہے

افغانستان میں تعینات امریکی اور بین الاقوامی افواج کے کمانڈر جنرل جان نکلسن کا یہ بھی کہنا تھا کہ حقانی نیٹ ورک کو اب بھی پاکستان میں محفوظ پناہ گاہیں حاصل ہیں۔

امریکی سینیٹ کی آرمڈ سروسز کمیٹی کے سامنے بیان دیتے ہوئے امریکی کمانڈر جنرل جان نکلسن کا بھی کہنا تھا کہ افغانستان میں نیٹو کے فوجی دستوں کی تعداد کم ہے۔ جنرل نکلسن نے بتایا کہ انہوں نے یہ معاملہ نئے امریکی وزیر دفاع جیمز میٹِس کے سامنے بھی اٹھایا ہے۔ امریکی جنرل نے یہ بھی بتایا کہ یہ معاملہ اب نیٹو کے وزرائے دفاع کے اجلاس کے ایجنڈے میں شامل کر لیا گیا ہے۔ یہ اجلاس آئندہ ہفتے کے دوران ہو گا۔