1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

پاکستان، پولیس کے چھاپے میں چار عسکریت پسند ہلاک

پاکستان میں انسدادِ دہشت گردی کے ایک اہلکار کے مطابق پاکستانی پولیس نے خانیوال کے ضلع میں فائرنگ کے دوران چار اسلامی عسکریت پسندوں کو  ہلاک کر دیا ہے۔

پاکستان میں انسدادِ دہشت گردی کے محکمے کے ایک اہلکار چوہدری محمد سلیم نے خبر رساں ادارے اے پی کو بتایا کہ یہ ہلاکتیں صوبہ پنجاب کے شہر خانیوال میں ایک چھاپے کے دوران جوابی فائرنگ کے نتیجے میں ہوئیں۔ محمد سلیم کے مطابق ان عسکریت پسندوں کا تعلق پاکستانی طالبان سے الگ ہونے والے ایک دھڑے جماعت الحرار سے تھا۔

جماعت الحرار نے جہادی گروہ اسلامک اسٹیٹ کے ساتھ اپنی حمایت کا اعلان تو کیا ہے تاہم اس کی حاکمیت قبول نہیں کی ہے۔ محمد سلیم کا کہنا تھا کہ چھاپے کے دوران دستی بم، رائفلیں اور دھماکہ خیز مواد قبضے میں لیا گیا ہے۔ یہ کارروائی پولیس اور پاکستانی فوج کے مشترکہ انٹیلیجنس آپریشن کا حصہ تھی۔ اس سے قبل آج صبح پاکستانی صوبہ بلوچستان کے ضلع مستونگ میں ایک نئے بم دھماکے میں چار نیم فوجی سکیورٹی اہلکار زخمی ہو گئے تھے۔

کوئٹہ سے موصولہ رپورٹوں میں پولیس کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ یہ بم دھماکا سڑک کے کنارے نصب ایک بم کی مدد سے کیا گیا۔ بظاہر ریموٹ کنٹرول کی مدد سے کیے جانے والے اس بم دھماکے سے پیرا ملٹری فرنٹیئر کور کی ایک گاڑی کو نشانہ بنایا گیا۔ اس گاڑی میں سوار اہلکار معمول کے حفاظتی گشت پر تھے۔ مستونگ میں گزشتہ جمعے کے روز بھی ایک بڑا بم دھماکا کیا گیا تھا، جس میں اٹھائیس افراد ہلاک ہو گئے تھے۔ اس حملے کی ذمے داری شدت پسند تنظیم داعش نے قبول کر لی تھی۔

DW.COM