1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

پاکستان میں مہنگائی: سماجی اور نفسیاتی مسائل میں اضافہ

ملک میں بڑھتی ہوی مہنگائی کے سبب جہاں بے روزگاری میں اضافہ ہورہا ہے وہیں سماجی اور نفسیاتی مسائل اور جرائم کی شرح بھی تیزی سے بڑھ رہی ہے۔

default

ملک میں مہنگائی کا بڑھتا ہوا طوفان مسائل کا پیش خیمہ

روزمرہ استعمال کی اشیاء جن میں آٹا، دالیں، چینی وغیرہ شامل ہیں لوگوں کی دسترس سے باہر ہوتی جارہی ہیں۔ بجلی اور گیس کی طلب و رسد میں موجود فرق میں مسلسل اضافے اور بڑھتی ہوئی قیمتوں کے باعث نہ صرف ملکی معیشت بری طرح متاثر ہورہی ہے بلکہ عام شہریوں کے ساتھ ساتھ اب تو تاجر اور صنعت کار برادری بھی صدائے احتجاج بلند کر تی نظر آتی ہے۔

آئی ایم ایف کی ہدایت پر حکومت نے ہر ماہ بجلی کی قیمت میں دو فیصد اضافے کا اعلان پہلے ہی کردیا گیا ہے جس کی وجہ سے عام آدمی پر عرصہ حیات مزید تنگ ہوتا جارہا ہے۔

Logo IMF Internationaler Währungsfond

آئی ایم ایف کی ہدایت پر حکومت کا ہر ماہ بجلی کی قیمت میں دو فیصد اضافے کا اعلان

ماہر سماجیات ڈاکٹر فتح محمد برفت کا کہنا ہےکہ جب لوگ اپنی ضروریات زندگی پوری کرنے میں ناکام ہوتے ہیں تو ان میں سے کچھ خودکشی کے مرتکب ہو جاتے ہیں جبکہ ان میں سے کئی جرائم کی طرف راغب ہو جاتے ہیں۔ ڈاکٹر برفت کے مطابق یہی منفی رویہ نہ صرف فرد بلکہ خاندانوں کی ٹوٹ پھوٹ کا باعث بھی بنتا ہے۔

ماہر نفسیات ڈاکٹر حیدر رضوی فتح محمد برفت کی رائے کی تائید کرتےہوئے کہتے ہیں:’’ مہنگائی جہاں معاشرے میں ناہمواریوں کو جنم دے رہی وہیں اس کے باعث پیدا ہونے والی سیاسی بے یقینی نے عوام کو ہیجان میں مبتلا کر رکھا ہے۔

ڈاکٹر رضوی کہتے ہیں مردوں کی نسبت خواتین کے لیے زیادہ مشکلات پیدا ہوتی ہیں کیونکہ اکثر کم آمدنی اور مہنگائی میں انہیں ہی گھر چلانا ہوتا ہے۔

مبصرین کی آراء میں معاشی تجزیہ کار حکومت کے خلاف تنقید سے بھرپور تجزیے دینے میں مصروف ہیں لیکن ان کا زمینی حقائق سے تعلق نظر نہیں آتا۔

آج حکومت کی حلیف جماعت ایم کیو ایم نے اس وقت سندھ اسمبلی ، سینٹ اور قومی اسمبلی سے مہنگائی، بجلی اورگیس کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف بطور احتجاج اجلاس سے واک آوٹ کیا لیکن سیاسی پنڈٹ اس طرح کے علامتی اقدامات کو عوامی اشک جوئی کے لئےناکافی قرار دیتے ہیں اور ان کی رائے میں حکمران اپنی شاہ خرچیوں کی وجہ سے حقیقی عوامی مسائل سے چشم پوشی کی راہ پر گامزن ہیں۔

رپورٹ: رفعت سعید،کراچی

ادارت: عصمت جبیں

DW.COM

ویب لنکس