1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

پاکستان سے متعلق امریکی پالیسی کے مصنف حسین حقانی ؟

پاکستان کے وزیر خارجہ نے امریکا میں پاکستان کے سابق سفیر حسین حقانی پر یہ الزام عائد کیا ہے کہ وہ ٹرمپ کی جنوبی ایشائی پالیسی کے مصنف ہیں اور سابق صدر ان پر اثرانداز ہوں۔

جمعرات کے روز خواجہ آصف نے اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر لکھا کہ زرداری بجائے حکومت پر تنقید کرنے کہ حسین حقانی پر اثر انداز ہونے کی کوشش کریں جو یہ کہہ رہے ہیں وہ ٹرمپ کی پالیسی کے مصنف ہیں۔‘‘ حسین حقانی نے اس ٹوئٹ کا جواب دیتے ہوئے لکھا،’’ پاکستان کے وزیر خارجہ اپنی پالیسی پر توجہ دیں  نا کہ ایک جلا وطن پاکستانی کو ٹوئٹر پر نشانہ بنائیں۔‘‘

ٹرمپ کے بیان نے پاکستانیوں کو تکلیف پہنچائی، عمران خان

پاکستان کو دہشت گردوں کو پناہ دینے کی قیمت چکانا ہو گی، ٹرمپ

ٹوئٹر پر خواجہ آصف اور حسین حقانی کے درمیان اس گفتگو پر کئی افراد نے اپنی رائے بھی دی۔ ٹوئٹر کے ایک صارف بلال نے لکھا، ’’حسین حقانی اس وقت پاکستان کی حکومت اور اسٹیبلشمنٹ کے لیے ایک نیا فوبیا بن گئے ہیں۔‘‘

ماروی سرمد نے اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر لکھا،’’اس سب کا مطلب ہے کہ حسین حقانی انتہائی ذہین انسان ہیں جو امریکا کے پالیسی سازوں پر اثر انداز ہو رہے ہیں اور ہماری حکومت ناکام ہو گئی ہے۔‘‘

واضح رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے رواں ہفتے بالخصوص افغانستان اور بالعموم جنوبی ایشیا کے حوالے سے اپنی پالیسی کا اعلان کیا ہے۔ پالیسی بیان میں ٹرمپ  نے پاکستان پر عسکریت پسندوں کو محفوظ پناہ گاہیں فراہم کرنے کا الزام عائد کیا اور پاکستان کو خبردار بھی کیا کہ اگر اُس نے اس حوالے سے اپنی پالیسی تبدیل نہ کی تو پاکستان کو دی جانے والی امریکی امداد بند کر دی جائے گی۔

DW.COM

ملتے جلتے مندرجات