1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

کھیل

پاکستان بھی پریمیئر لیگ شروع کرے : شعیب اختر

پاکستانی فاسٹ باؤلر شعیب اختر نے غیر ملکی ٹیموں کو پاکستان میں کھیلنے پر آمادہ کرنے کے لئے تجویز پیش کی ہے کہ ملک میں کھلاڑیوں کو مالدارکر دینے والی ٹونٹی20 پریمیئر لیگ شروع کی جائے۔

default

شعیب اخترکا کہنا تھا کہ غیر ملکی کھلاڑیوں کو پیسے کی ذریعہ پاکستان لایا جا سکتا ہے۔

منگل کو ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے شعیب اخترکا کہنا تھا کہ پاکستان میں کرکٹ کے کھیل کوتباہی سے بچانے کے لئے ضروری ہے کہ انڈین پریمیئر لیگ (آئی پی ایل) کی طرز پر یہاں بھی پروفیشنل لیگ متعارف کرائی جائے۔ غیر ملکی کھلاڑیوں کو پیسے کی ذریعہ پاکستان لایا جا سکتا ہے۔

Shoaib Akhtar, Pakistan

شعیب اختر کا کہنا تھا کہ بھارت اور دیگر کرکٹ ٹیموں کو پاکستان کے وقار کا بھی اسی طرح خیال رکھنا چاہئیے جس طرح بر طانوی ٹیم نے بمبئی کے واقعات کے باوجود بھارت کا دوبارہ دورہ کیا۔

واضح رہے کہ سال رواں میں دہشت گردی اورخود کش بم دھماکوں کی بڑھتی ہوی وارداتوں کے باعث پاکستان کو آئی سی سی چیمپئنز ٹرافی کی میزبانی سے محروم ہونا پڑا جبکہ آسٹریلیا کی ٹیم نے بھی دورہ کرنے سے انکار کر دیا تھا۔

راولپنڈی ایکسپریس کے نام سے عالمی شہرت رکھنے والے شعیب اختر کا کہنا تھا کہ وہ کئی ایسے اداروں اور امیر ترین افراد سے واقف ہیںجو پاکستان میں ملٹی ملین ٹونٹی20 لیگ جیسے منصوبوں پر سرمایہ کاری کرسکتے ہیں۔

ایک سوال کے جواب میں دنیا کے تیز ترین باؤلر نے کہا کہ بھارت اور دیگر کرکٹ ٹیموں کو پاکستان کے وقار کا بھی اسی طرح خیال رکھنا چاہئیے جس طرح بر طانوی ٹیم نے بمبئی کے واقعات کے باوجود بھارت کا دوبارہ دورہ کیا۔

Pakistan cricketers Akhtar and Asif

شعیب اختر تنازعات اور مسائل سے بھرے اپنے10 سالہ کیرئیر میں صرف138ون ڈے اور46 ٹیسٹ کھیل کر بالترتیب 219 اور178 وکٹیں لے چکے ہیں

اپنے ذاتی اہداف کے حوالے سے شعیب اختر نے بتایا کہ وہ عالمی کپ2011 تک کھیلنے اور ایک روزہ بین الاقوامی کرکٹ میں 400 وکٹیں لینے کے خواہش مند ہیں۔

شعیب اختر تنازعات اور مسائل سے بھرے اپنے10 سالہ کیرئیر میں صرف138ون ڈے اور46 ٹیسٹ کھیل کر بالترتیب 219 اور178 وکٹیں لے چکے ہیں۔ ان پر سترلاکھ جرمانے اوردو سالہ پابندی کا ایک مقدمہ اس وقت بھی لاہور ہائی کورٹ میں زیر سماعت ہے۔