1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

پاکستان بھر میں جماعت الدعوۃ کے خلاف کارروائیاں

پاکستانی حکومت نے ایک عسکریت پسند گروپ کے ساتھ رابطوں کے باعث سماجی فلاحی تنظیم جماعت الدعوۃ پر پابندی لگاتے ہوئے پورے ملک میں اس کے تمام دفاتراور مراکز سیل کر دیئے ہیں۔

default

پاکستانی حکام نے بھارت کی جانب سے سلامتی کونسل میں پیش کی جانے والی قرارداد کا متن موصول ہونے کی تصدیق کر دی ہے

پاکستانی حکومت کی جانب سے ان کارروئیوں کے ساتھ ہی مختلف مقامات سے متعدد افراد کی گرفتاریوں کا سلسلہ بھی جاری ہے۔

اقوام متحدہ کی جانب سےجماعت الدعوۃ پر پابندی کے فیصلے کے بعد حکومت نے جمعرات کے روز چاروں صوبوں اور پاکستان کے زیر انتظام کشمیر میں اس خیراتی تنظیم کے خلاف آپریشن کا آغاز کر دیا ہے۔جماعت الدعوۃ کے سربراہ حافظ محمد سعید کوان کے گھر پرتین ماہ کے لئے نظر بند کر دیا گیا ہے اوران کے بیرون ملک سفر پر بھی پابندی عائد کر دی گئی ہے۔ مقامی حکام کے مطابق اس تنطیم کے جملہ بینک اکاؤنٹس منجمد کرنے کی ہدایات بھی جاری کر دی گئی ہیں۔

Zaki ur Rehman Lakhwi

لکھوی پہلے بھی زیر حراست رہ چکے ہیں

اس سے قبل جمعرات ہی کے روزپاکستانی مشیر داخلہ رحمان ملک نے اسلام آباد میں ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ اسلام آباد حکومت کی جانب سے کالعدم تنظیموں کے خلاف کارروائیاں کسی بیرونی دباؤ کے نتیجے پر نہیں کی جا رہیں بلکہ یہ اقدامات حکومتی پالیسی کا حصہ ہیں۔

مشیر داخلہ نے کہا کہ بھارت نے ممبئی حملوں میں پاکستانی شہریوں کے ملوث ہونے کے حواالے سے اب تک پاکستان کوکوئی ثبوت مہیا کئے۔ انہوں ‌نے کہا کہ بھارت کی جانب سے اگر پاکستان کو کوئی ثبوت پیش کئے گئے‌ تو پاکستان ممبئی میں دہشت گردانہ حملوں کی تحقیقات میں‌ تعاون پر تیار ہے۔

رحمان ملک نے بتایا کہ بھارت کی جانب سے سلامتی کونسل میں پیش کی جانے والی قرارداد کا متن اسلام آباد میں وزارت خارجہ کو موصول ہو گیا ہے جس کا جائزہ لینے کے بعد وزارت خارجہ ہی حکومتی موقف کا اظہار کرے گی۔

Audios and videos on the topic