1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

پاکستان اقتصادی بحران سے نکل چکا ہے، آئی ایم ایف کی سربراہ

بین الاقوامی مالیاتی فنڈ کی سربراہ کرسٹین لاگارڈ نے اپنے پہلے دورہ پاکستان کے دوران کہا کہ اس جنوبی ایشیائی ملک کی معیشت اب مستحکم ہے اور پاکستان اس اقتصادی بحران سے نکل چکا ہے، جس کا است سامان تھا۔

بین الاقوامی مالیاتی فنڈ کی مینیجنگ ڈائریکٹر کرسٹین لاگارڈ نے آج پیر چوبیس اکتوبر کو اسلام آباد میں ملکی وزیر اعظم نواز شریف سے ملاقات کے دوران کہا کہ پاکستان نے کامیابی کے ساتھ نہ صرف آئی ایم ایف کا  پروگرام مکمل کر لیا ہے بلکہ تھوڑے ہی عرصے میں اپنے اقتصادی استحکام کی منزل بھی حاصل کر لی ہے۔

آئی ایم ایف نےگزشتہ برس اپنے ایک پروگرام کے تحت مجموعی طور پر 6.6 ارب ڈالر کے قرضوں کی آخری قسط پاکستان کو جاری کر دی تھی۔ اس سلسلے میں لاگارڈ نے کہا، ’’پاکستان نے صرف دو برسوں میں ہی اپنی پوزیشن بہتر اور مستحکم بنا لی ہے۔‘‘

وزیر اعظم نواز شریف کے دفتر کے جاری کردہ ایک بیان کے مطابق  لاگارڈ نے اپنے اس دورے کے دوران یہ موقف بھی اختیار کیا کہ پاکستان میں مہنگائی کی شرح کم ہوئی ہے اور اقتصادی ترقی کی شرح میں اضافہ بھی ہوا ہے۔ آئی ایم ایف کی سربراہ نے پاکستان میں انتظامی شعبے میں اصلاحات اور ملکی ٹیکس پالیسی کی بھی تعریف کی۔

پاکستان کے انگریزی روزنامے ’دا نیوز‘ میں شائع ہونے والے اپنے ایک مضمون میں IMF کی سربراہ نے لکھا، ’’آئی ایم ایف کے تین سالہ اقتصادی اصلاحاتی پروگرام سے پاکستان میں بہت سی کامیابیاں حاصل کی گئی ہیں۔ اب پاکستانی معیشت مستحکم ہے اور کوشش کی جا رہی ہے کہ مستقبل میں نجی شعبے کی مدد سے مزید ترقی کی جاسکے۔‘‘