1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

معاشرہ

'پاکستانی نژاد جرمن خاتون غیرت کے نام پر قتل‘

پاکستانی میڈیا کے مطابق جہلم میں ایک شخص نے اپنی پاکستانی نژاد جرمن اہلیہ کو غیرت کے نام پر قتل کردیا ہے۔ پولیس نے شوہر اور اس کے ساتھی کو حراست میں لے لیا ہے۔

پاکستانی نیوز چینل جیو کے مطابق اس شخص کا کہنا ہے کہ اس نے اپنی بیوی کو جہلم بلایا جہاں اسے غیرت کے نام پر قتل کر دیا۔ وہ فرار ہونے کا ارادہ رکھتا تھا اور ٹکٹ بھی خرید لیا تھا۔ پولیس نے شہباز نامی اس شخص اور اس کے ایک ساتھی کو حراست میں لے لیا ہے۔

مقامی میڈیا کے مطابق قتل ہونے والی خاتون کا نام ڈاکٹر عظمیٰ ہے۔  شہباز نے اپنی بیوی کو کھاریاں میں اس کے والدین کے گھر سے جہلم بلوایا اور قتل کر دیا۔ پولیس کی تفصیلات کے مطابق شوہر اور بیوی میں جھگڑا ہوا جس کے بعد شہباز نے اپنی اہلیہ کو گولی مار دی۔

ویڈیو دیکھیے 01:41

پاکستان: نیا قانون غیرت کے نام پر قتل کے خلاف ایک امید

ایک اندازے کے مطابق ہر سال پاکستان میں کم از کم ایک ہزار خواتین کو غیرت کے نام پر قتل کر دیا جاتا ہے۔ اس برس اکتوبر میں پاکستان کی پارلیمنٹ نے غیرت کے نام پر قتل کے خلاف قانون میں ترمیم کی تھی۔ سابقہ قانون میں جو ترمیم کی گئی تھی، اُس کے مطابق غیرت کے نام پر قتل کے مجرموں کو سخت سزاؤں کا سامنا ہو گا۔

 مجرم کو دی گئی موت کی سزا کو اگر قتل کیے جانے والی عورت یا مرد کے خاندان والے معاف بھی کر دیں گے تو بھی مجرم کو پچیس برس کی عمر قید ہر صورت میں بھگتنا ہو گی۔

DW.COM

Audios and videos on the topic