1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

پاکستانی قربانیوں کا احترام کیا جائے، چین

پاکستانی خارجہ امور کی سیکرٹری نے افغانستان کے لیے خصوصی چینی مندوب سے ملاقات میں علاقائی سلامتی کی صورتحال پر بات چیت کی ہے۔ یہ پیشرفت ایسے وقت میں ہوئی ہے، جب اسلام آباد نے ایک اعلیٰ امریکی اہلکار کا دورہ منسوخ کیا ہے۔

خبر رساں ادارے روئٹرز نے پاکستانی وزارت خارجہ کے حوالے سے بتایا ہے کہ پاکستان کی خارجہ امور کی سیکرٹری تہمینہ جنجوعہ نے اسلام آباد میں چینی مندوب برائے افغانستان ڈینگ ژی یُن سے ملاقات کی ہے۔ اس ملاقات میں دونوں عہدیداروں نے افغانستان کے حالات کے علاوہ علاقائی سلامتی کے صورتحال پر بھی تبادلہ خیال کیا۔

پاکستان سے متعلق امریکی پالیسی کے مصنف حسین حقانی ؟

امریکا پاکستان کے سلامتی کے تحفظات کا احترام کرے، چین

کابل امریکی امداد کو ’بلینک چیک‘ نہ سمجھے، ٹرمپ

ویڈیو دیکھیے 02:57

آپریشن خیبر فور: مقامی لوگ کیا کہتے ہیں؟

پاکستانی وزارت خارجہ کی طرف سے جاری کردہ بیان میں اس ملاقات کو اہم قرار دیتے ہوئے کہا گیا ہے کہ دونوں عہدیداروں نے افغانستان میں پائیدار امن اور استحکام کی کوششوں پر توجہ مرکوز کی۔

دفتر خارجہ کی طرف سے مزید کہا گیا کہ چینی اہلکار نے کہا ہے کہ دہشت گردی کے خاتمے کی خاطر بیجنگ حکومت پاکستان کی قربانیوں اور کوششوں کا اعتراف کرتی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ عالمی برداری کو بھی پاکستان کی ان کوششوں کی ستائش کرنی چاہیے۔

 

اس ملاقات سے ایک روز قبل ہی پاکستان نے اعلیٰ امریکی اہلکار ایلس ویلز کا دورہ پاکستان منسوخ کر دیا تھا۔ امریکی وزارت خارجہ کی نائب سیکرٹری برائے جنوبی و وسطی ایشیائی امور کا یہ دورہ ایسے وقت میں منسوخ کیا گیا ہے، جب ایک ہفتہ قبل ہی امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے پاکستان پر الزام عائد کیا تھا کہ وہ افغان جنگ کو طول دینے کا باعث بن رہا ہے۔

ٹرمپ نے کہا تھا کہ پاکستان ایسے جنگجوؤں کو محفوظ ٹھکانے فراہم کیے ہوئے ہے، جو افغانستان میں شورش کو ہوا دے رہے ہیں۔ اسلام آباد حکومت ان الزامات کو مسترد کرتی ہے۔

اس تناظر میں اسلام آباد حکومت نے سخت ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ افغان جنگ میں ’امریکی ناکامی‘ پر پاکستان کو ’قربانی کا بکرا‘ نہ بنایا جائے۔ پاکستان نے یہ الزام بھی عائد کیا ہے کہ امریکی فوج افغانستان میں جنگوؤں کی پناہ گاہوں کو ختم کرنے میں ناکام ہو گئی ہیں۔

بتایا گیا ہے کہ ایلس ویلز نے اپنے دورہ پاکستان کے دوران امریکی صدر ٹرمپ کی نئی افغان پالیسی پر اعلیٰ پاکستانی حکام سے ملاقاتیں کرنا تھیں۔ افغانستان اور جنوبی ایشیا کے لیے نئی امریکی پالیسی پر پاکستان نے شدید تحفظات کا اظہار بھی کیا ہے۔

DW.COM

Audios and videos on the topic