1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

پاکستانی صوبہ بلوچستان میں گیس پائپ لائن تباہ

پاکستان میں قدرتی گیس فراہم کرنے والی کمپنی کے ترجمان کے مطابق بلوچستان کو گیس فراہم کرنے والی دو اہم پائپ لائنوں کو دھماکے سے اڑا دیا گیا ہے جس کے بعد ملک کے جنوب مغربی علاقوں کو گیس کی سپلائی معطل ہو گئی ہے۔

default

سوئی سدرن گیس کمپنی کے ترجمان عنایت اللہ اسماعیل کا کہنا ہے کہ دونوں پائپ لائنوں کو منگل کی صبح تباہ کر دیا گیا جس کے باعث شکارپور سے کوئٹہ اور صوبہ بلوچستان کے بیشتر علاقوں کو گیس کی سپلائی معطل ہوگئی ہے۔

ترجمان کے مطابق ان لائنوں کی مرمت میں تین دن لگ سکتے ہیں، جبکہ پورے صوبے کو آج رات تک گیس کی سپلائی معطل رہ سکتی ہے۔ دھماکے کے باعث صوبے کے صعنتی علاقوں اور سی این جی اسٹیشنوں کو دی جانے والی گیس کی ترسیل بھی روک دی گئی ہے۔

Flash-Galerie Ölpest Eindämmung

بلوچستان کو گیس کی سپلائی تین دن تک معطل رہ سکتی ہے

پاکستان پہلے ہی قدرتی گیس کی کمی کے مسئلے کا سامنا کر رہا ہے جس کے باعث عوام سردی کے موسم میں گیس کی لوڈشیڈنگ اور اپنے گھروں کو گرم رکھنے میں مشکلات کا شکار ہیں۔

ادھر اس واقعے کی ذمہ داری کا شبہ علیحدگی پسند تنظیم بلوچ لبریشن آرمی پر ظاہر کیا جا رہا ہے جو ماضی میں بھی گیس پائپ لائنوں، ریلوے ٹریکس اور بجلی کے کھمبوں کو تباہ کرنے کی وارداتوں میں ملوث ہونے کا اقرار کر چکی ہے۔

واضح رہے کہ بلوچستان نہ صرف پورے ملک کو گیس فراہم کرنے والا سب سے بڑا صوبہ ہے بلکہ دنیا کے سب سے بڑے تانبے کے ذخائر بھی اسی صوبے میں پائے جاتے ہیں تاہم ملک کا یہ صوبہ سابق صدر پرویز مشرف کے دور حکومت سے اندرونی یورش کا شکار ہے۔

رپورٹ: عنبرین فاطمہ

ادارت: افسر اعوان

DW.COM