1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

ٹرمپ کی ٹیم کے روس کے ساتھ ’رابطوں‘ کی تحقیقات جاری ہیں، ایف بی آئی

امریکی وفاقی تفتیشی ادارے ایف بی آئی کے ڈائریکٹر نے پہلی مرتبہ تصدیق کی ہے کہ ان کا ادارہ گزشتہ برس ہوئے امریکی صدارتی انتخابات میں مبینہ روسی مداخلت کے معاملے کی تحقیقات کر رہا ہے۔

ایف بی آئی کے ڈائریکٹر جیمز کومی کے مطابق اس وقت تحقیقات جاری ہیں کہ آیا ماسکو حکومت نے امریکی انتخابات پر اثر انداز ہونے کی کوشش کی تھی یا نہیں۔ اس موقع پر کومی نے کہا کہ یہ خاص قسم کی تفتیش ہے اور ابھی جاری بھی ہے، اس وجہ سے وہ اس بارے میں ابھی مزید بتا نہیں سکتے کہ ان کا ادارہ کیا کر رہا ہے اور کون اس عمل کی نگرانی پر مامور ہے۔

یہ بات انہوں نے ایوان نمائندگان کی خفیہ کمیٹی کے سامنے بیان دیتے ہوئے کہی۔ کانگریس کی اس انٹیلیجنس کمیٹی نے آج کومی سے روس کی امریکی انتخابات میں مبینہ مداخلت کے موضوع پر ہی سوال جواب کیے۔ اس دوران ان سے یہ بھی پوچھا گیا کہ آیا ماسکو کے سرگرم افراد اور ٹرمپ کی انتخابی مہم کے درمیان بھی روابط تھے یا نہیں۔

ایف بی آئی کے ڈائریکٹر جیمز کومی نے اپنے آج کے بیان میں ان الزامات کو بھی مسترد کیا کہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی ٹیلیفون خفیہ طور پر سننے گئے ہیں۔

اس سے قبل سابق امریکی صدر باراک اوباما بھی کہہ چکے ہیں کہ جب کبھی بھی کسی غیر ملکی حکومت کی موجوگی امریکی انتخابی عمل میں محسوس کی گئی تو امریکی قوم نے اُس کے خلاف ردعمل ظاہر کیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا تھا کہ اس بار بھی ایسا ہی کیا جائے گا۔

آج کل  امریکی صدارتی انتخابات میں روسی صدر کے اثرانداز ہونے کا معاملہ خاصا گرم ہے۔تاہم امریکی الیکشن میں روسی مداخلت کے ان مبینہ الزامات کی روسی حکومت نے واضح انداز میں تردید کی ہے۔