1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

ٹرمپ کو الیکٹورل ووٹوں کی برتری حاصل: نیو یارک ٹائمز

امریکی اخبار نیو یارک ٹائمز میں چھپنے والی تازہ ترین رپورٹ کے مطابق صدارتی انتخابات کے اب تک سامنے آنے والے نتائج سے یہ تاثر مل رہا ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ امریکا کے اگلے صدر ہوں گے۔

نیو یارک ٹائمز کے مطابق ریپبلکن امیدوار ڈونلڈ ٹرمپ کی ڈیموکریٹ امیدوار ہلیری کلنٹن پر سبقت لے جانے کے امکانات 54 فیصد تک پہنچ گئے ہیں۔ گزشتہ گھنٹوں کے دوران ٹرمپ کو اب تک ملنے والے الیکٹورل ووٹوں کی تعداد اس امر کی نشاندہی کر رہی ہے کہ ممکنہ طور پر ٹرمپ اب تک لگائے جانے والے اندازوں سے کہیں زیادہ تعداد میں الیکٹورل ووٹ حاصل کر لیں گے۔ یہ پہلی بار ہوا ہے کہ نیو یارک ٹائمز میں ٹرمپ کی کلنٹن پر سبقت کے حتمی ہونے کا تاثردیا جا رہا ہے۔

نیو یارک ٹائمز تاہم یہ تحریر کر رہا ہے کہ دونوں صدارتی امیدواروں کے مابین الیکٹورل ووٹوں کی تقسیم ناقابل یقین حد تک قریب ہو گی اور پیشگوئی یہ ہے کہ مقابلہ کانٹے کا ہوگا اور ہلیری اور ٹرمپ کے مابین ٹائی بھی پڑ سکتی ہے۔ اب تک کے اندازوں کے مطابق گرچہ اس بات کی قوی امید ہے کہ ہلیری کلنٹن دو سے تین فیصد تک پاپولر ووٹ حاصل کر لیں گی تاہم اس سے ٹرمپ کی برتری میں فرق نہیں آئے گا کیونکہ پیشگوئی یہی ہے کہ ٹرمپ کو الیکٹورل ووٹ زیادہ مل جائیں گے جو اُن کی جیت کو یقینی بنا دیں گے۔

اُدھر ٹرمپ کے ممکنہ طور پر امریکی صدربننے کی پیشگوئی نے پوری دنیا میں ہلچل مچا دی ہے خاص طور سے بازار حصص میں۔ بیرون ملک کی مالیاتی منڈیوں جن میں ایشیائی مارکیٹس بھی شامل ہیں، میں تیزی سے گراوٹ دیکھنے میں آ رہی ہے۔ کرنسی کی قیمتوں میں بھی خاصا اتار چڑھاؤ دیکھا جا رہا ہے۔ میکسیکو کے پیسو کی قیمت میں کمی آئی ہے جب کہ جاپان کی کرنسی ین کی قیمت میں اضافہ ہوا ہے۔ تاہم ٹوکیو اسٹاک ایکسچینج میں ساڑھے پانچ فیصد کمی بھی دیکھی گئی۔

حصص بازار کے تاجروں نے ہلیری کی جیت کی توقع کی تھی ایسے میں اگر مقابلہ سخت بھی ہو تو بازار گراوٹ کا شکار ہو سکتا ہے۔

ملتے جلتے مندرجات