1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

ٹرمپ جی سیون سمٹ میں شریک، دہشت گردی کا معاملہ سرفہرست

دنیا کی سات طاقتور ترین اقوام کے گروپ جی سیون کے سربراہان آج جمعہ 26 مئی کو اٹلی میں ملاقات کر رہے ہیں۔ تجارت اور گلوبل وارمنگ کے معاملے پر اختلافات کے باجود یہ سربراہان دہشت گردی کے خلاف متحد ہیں۔

دو روزہ جی سیون سربراہی اجلاس اطالوی جزیرے سِسلی کے تاریخی و سیاحتی مقام تاؤرمینا میں آج 26 مئی سے شروع ہو رہا ہے۔ یہ اجلاس ایک ایسے وقت پر شروع ہو رہا ہے جب اتوار اور پیر کی درمیانی شب مانچسٹر میں ایک میوزک کنسرٹ کے بعد ہونے والے خودکش حملے میں 22 افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق برطانوی وزیراعظم ٹریزا مے دہشت گردی کے موضوع پر ایک بحث کی صدارت کریں گی اور توقع کی جا رہی ہے کہ وہ جی سیون ممالک پر زور دیں گی کہ وہ انٹرنیٹ کمپنیوں کو اس بات کا پابند بنانے کے لیے اقدامات کریں کہ وہ شدت پسندانہ مواد کو ویب سائٹس پر سے ہٹائیں۔

جی سیون ملاقات سے قبل ایک برطانوی اہلکار کا کہنا تھا، ’’لڑائی اور میدان جنگ سے انٹرنیٹ پر منتقل ہو رہی ہے۔‘‘

USA Trump Flugzeug Ankunft Symbolbild (Getty Images/AFP/S. Loeb)

جی سیون سربراہی اجلاس میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ پہلی مرتبہ شریک ہوں گے

اٹلی کے جزیرے سِسلی کے سیاحتی مقام تاؤرمینا میں ہونے والے اس اجلاس میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ پہلی مرتبہ شریک ہوں گے۔ اس کے علاوہ برطانوی وزیراعظم ٹریزا مے اور فرانسیسی صدر ایمانوئل ماکروں بھی پہلی بار جی سیون سربراہی اجلاس میں شریک ہو رہے ہیں۔

تاؤرمینا میں ہونے والے دو روزہ جی سیون سربراہی اجلاس میں امریکا کے علاوہ کینیڈا، فرانس، برطانیہ، جرمنی، اٹلی اور جاپان کے رہنما بھی اِس اجلاس میں شریک ہوں گے۔ نسبتاﹰ کم دورانیے کے اس اجلاس میں خاص طور پر عالمی اقتصادی مسائل پر فوکس کیا جائے گا۔ اس کے علاوہ سمٹ کے ایجنڈے پر روس، شام، ایران اور شمالی کوریا کے معاملات بھی موجود ہیں۔