1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

کھیل

وینس، شاراپوا اور اینڈی مرے فرنچ اوپن سے باہر

خواتین ٹینس کی عالمی نمبر دو امریکی کھلاڑی وینس ولیمز اور سابق عالمی نمبر ایک روسی کھلاڑی ماریہ شاراپووا اتوار کے روز فرنچ اوپن میں اپنے اپنے میچز ہارنے کے بعد اس گرینڈ سلیم ایونٹ سے باہر ہو گئی ہیں۔

default

فرنچ اوپن کے آٹھویں روز پیرس میں چلنے والی خنک اور تند ہوائیں کئی کھلاڑیوں کو اڑا کر لے گئیں۔ اتوار کا دن فرنچ اوپن میں اپ سیٹس کا دن دکھائی دیا۔ ایک طرف تو شاراپووا شکست کے بعد ایونٹ سے باہر ہوئیں، دوسری طرف وینس ولیمز کو عالمی نمبر 19 نادیہ پیترووا کے ہاتھوں شکست کا سامنا کرنا پڑا۔ ایک اور مقابلے میں برطانوی مرد کھلاڑی اینڈی مرے بھی شکست کے بعد فرنچ اوپن سے باہر ہوگئے۔

کلے کورٹ پر کھیلنے کے دلدادہ سمجھے جانے والے عالمی نمبر چار برطانوی کھلاڑی اینڈی مرے، جو اب تک اس ایونٹ سے خارج ہونے والے سب سے اہم مرد کھلاڑی ہیں، اپنی شکست پر سخت غصے میں دکھائی دئے۔

Andy Murray 2008 in Shanghai

اینڈی مرے اب تک اس ٹورنامنٹ سے باہر ہونے والے سب سے اہم مرد کھلاڑی ہیں

خواتین کے انفرادی مقابلوں میں وینس ولیمز کو شکست سے دوچار کرنے والی نادیہ پیترووا نے جیت کے بعد اپنے تاثرات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ انہیں اس بار کا فرنچ اوپن کسی ڈرامے جیسا لگ رہا ہے۔ پیترووا اس جیت کے بعد ایونٹ کی آخری آٹھ کھلاڑیوں میں آگئیں ہیں۔ اب کا اگلا مقابلہ ان کی ہم وطن روسی کھلاڑی ایلینا دیمتیوا سے ہوگا۔

وینس ولیمز نے اپنی شکست کے حوالے سے کہا کہ پیرس کی سرد ہواؤں کے باعث ان سے کھیل میں کافی ساری غلطیاں ہوئیں۔ ’’مجھے لگتا ہے یہ ایک ایسا دن تھا، جب میں گیند کو کورٹ کے دوسرے جانب پھینکنے کی کوشش کر رہی تھی اور گیند لکیر پر گر جاتی تھی۔ کبھی کبھی سردی زیادہ ہو تو ہاتھ ریکٹ کی موجودگی کو ٹھیک سے محسوس نہیں کرتا۔‘‘

اس سے قبل جیسٹین ہینن نے عالمی نمبر 12 ماریہ شاراپووا کو شکست دے کر ایونٹ سے باہر کر دیا۔

ایک اور مقابلے میں Tomas Berdych نے عالمی نمبر چار اینڈی مرے کو چھ چار سات پانچ اور چھ تین سے شکست دے دی۔ اینڈی مرے کھیل میں تاخیر اور کم روشنی کے باعث مکمل طور پر بے بس دکھائی دئے۔ Tomas Berdych جیت کے بعد اپنے ایک بیان میں کہا : ’’میچ کے وقت موسمی حالات ایسے تھے، جنہیں میں ہینڈل کر گیا اور مرے انہیں ویسا ہینڈل نہ کر پائے۔‘‘

رپورٹ : عاطف توقیر

ادارت : شادی خان سیف

DW.COM