1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

فن و ثقافت

وینز ویلا میں ریفرنڈم

جنوبی امریکہ کے ملک وینزویلا میں صدر ہو گو شاویز کی دستوری ترمیم کے لئے ووٹنگ شروع ہو چکی ہے۔ اپوزیشن کے خیال میں ریفرنڈم میں شاویز کی کامیابی سے اُن کے ملک کا جمہوری معاشرہ آمریت کے حصار میں جا سکتا ہے۔

default

وینز ویلا کے درالحکومت کاراکس کی دیوار پر ریفرنڈم میں نہیں کے حق میں لگائے گئے پوسٹر

وینزویلا کے بائیں بازو کے نظریات کے صدر ہوگو شاویز کو آج پھر ایک بڑے چیلنج کا سامنا ہے۔ وہ مدتِ صدارت میں لا محدود الیکشن کے طلبگار ہیں۔ ریفرنڈم میں عوام کی ’’نہیں‘‘ سے اُن کے خواب بکھر کر رہ جائیں گے۔ وینزویلا میں اِس ریفرنڈم پر اپوزیشن کی جانب سےجو نعرہ عام کیا گیا ہے اُس میں شامل ہے کہ’’ نہیں، نہیں ہے‘‘۔ یہ اِس لئے کہ پندرہ فروری کے ریفرنڈم میں پیش کردہ تجویز سن دو ہزار سات کے ریفرنڈم میں مسترد ہو چکی ہے۔

Hugo Chavez Venezuela

وینز ویلا کے صدر: ہوگو شاویز

ہو گو شاویز کی خواہش ہے کہ عوام اُن کو بار بار صدر بننے کی اجازت دیں وگرنہ دوسری صورت میں عہدہ صدارت پر اُن کی یہ دوسری اور آخری مدت ہے۔ اُن کی موجودہ مدتِ صدارت سن دو ہزار بارہ میں ختم ہو گی۔ اگر ریفرنڈم میں اُن کی تجویز کو عوامی تائید حاصل ہو گئی تو وہ اِس کے بعد بھی صدر کا منصب سنبھال سکیں گے۔

Demonstration in Caracas Venezuela gegen Chávez

ریفرنڈم میں پیش کردہ تجویز کی مخالفت میں اپوزیشن کا مظاہرہ

شاویر مطمئن : رائے عامہ کے جائزوں کے مطابق وہ اِس ریفرنڈم میں معمُولی اکثریت کے ساتھ کامیابی حاصل کر سکتے ہیں۔شاید اِنہی جائزوں کے باعث ہو گو شاویز خاصے مطمئن دکھائی دیتے ہیں کہ وہ اِس بار کامیابی حاصل کر لیں گے اور اِسی مناسبت سے ہفتہ کو اپنے خطاب میں کہا کہ عوام کی ہاں سے اُن کے اعتماد میں اضافہ ہو گا اور وہ اپنے اصلاحاتی عمل کو جاری و ساری رکھیں گے۔ اُن کا مزید خیال ہے کہ اِس ترمیم سے اُن کے سوشلسٹ انقلاب کو مزید استحکام حاصل ہو گا۔

Demonstration in Venezuela gegen Chávez

ریفرنڈم کی مخالفت میں نکالے گئے مظاہرے میں شریک ایک لڑکی

اُنہوں نے اپنے ملک کے غریبوں کو متنبہ کیا کہ اگر اُنہوں نے اُن کے حق میں ووٹ نہ ڈالا تو وہ اُن کے سماجی پروگرام سے ہاتھ دھو بیٹھیں گے۔ شاویز نے اپوزیشن پر بھی تنقید کی کہ وہ امریکی ہاتھ میں کھلونا بنی ہوئی ہے۔

کمیونسٹ آمر بننے کا الزام: دوسری جانب اپوزیشن کا کہنا ہے کہ شاویز رفتہ رفتہ کمیونسٹ آمر کا روپ دھار رہے ہیں جو وینز ویلا کی قدیمی جمہوریت کے لئے نقصان دہ ہے۔ اُن کا یہ بھی کہنا ہے کہ شاویز نے گزشتہ دو سالوں میں اقتصادی مد میں حاصل ہونے والی آمدن کوریفرنڈم کی مہم پر خرچ کردیا ہے۔

Hugo Chavez zur Verfassungsänderung

صدر ہوگو شاویز کے حامیوں کی ریلی

گزشتہ جمعہ کے دِن ایک یورپی سفارت کار کو شاویز نے اِس لئے بیدخل کردیا تھا کہ اُس نے ریفرنڈم کے دوران الیکشن اتھارٹی کے غیر جانبدار ہونے پر شک کا اظہار کیا تھا۔

ویلنٹائن ڈے سے اگلے دِن ہونے والے ریفرنڈم کی مناسبت سے شاویز کے حامیوں نے محبت کے اس دن کو بھی عوام کی حمایت حاصل کرنے کے لئےخوب استعمال کیا۔

صدارتی مدت: وینز ویلا میں ایک صدارتی مدت چھ سالوں پر محیط ہو تی ہے۔ اِسی باعث گزشتہ دنوں میں ہوگو شاویز نے اپنی صدارت کے دس سال پورے ہونے کا جشن بھی منایا اور اُس میں اُن کا کہنا تھا کہ جس انقلابی ایجنڈے پر وہ عمل پیرا ہے اُس کے لئے دس سال کوئی مدت نہیں ہے۔

ہوگو شاویز نے اپنے ملک کے صدر کا عہدہ یوں تو دو فروری سن1999 کو سنھبالا تھا مگر بعد میں نئے دستور کے متعارف کروانے کے بعد جہاں ملک کے سرکاری نام میں تبدیلی لائی گئی وہیں مدت صدارت پانچ سے چھ سال کر دی گئی۔ نئے دستور کے تحت اُنہوں نے دس جنوری سن 2001 کو صدر کا عہدہ سنبھالا اور دوسری مدت کے لئے سن 2007 میں وہ کامیاب ہوئے تھے۔