1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

’’وکی لیکس پر غیر قانونی تفتیش ہو سکتی ہے‘‘ : اسانج

وکی لیکس کے بانی جولیان اسانج نے جمعہ کے روز الزام عائد کیا ہے کہ انہیں اور ان کی تنظیم کو ایسے افراد کی طرف سے غیر قانونی تحقیقات کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے، جنہیں وکی لیکس انکشافات کی وجہ سے ندامت کا سامنا کرنا پڑا۔

default

برطانیہ میں ضمانت پر رہائی کے بعد ایلیگم ہال میں بات چیت کرتے ہوئے اسانج نے کہا کہ ان کی تنظیم سے منسلک افراد کے کمپیوٹروں کو قبضے میں لینے سمیت متعدد ایسے اقدامات ہیں، جن سے یہ اندازہ ہوتا ہے کہ وکی لیکس کو شدید مشکلات کا سامنا ہے اور ان مشکلات میں مزید اضافہ ہو گا۔

Wikileaks Juilan Assange vor Gericht

ضمانت کے وقت عدالت کے باہر سینکڑوں افراد اسانج کے حق میں مظاہرہ کر رہے تھے

سویڈن میں دو خواتین کے ساتھ جنسی زیادتی کے الزامات کے تحت لندن میں گرفتار کیے جانے والے 39 سالہ اسانج جمعرات کے روز ضمانت پر رہا ہوئے تھے۔ اسانج نے دعویٰ کیا : ’’ہم دیکھ سکتے ہیں کہ چند افراد، جن پر صرف یہ الزام تھا کہ وہ وکی لیکس سے منسلک ہیں، انہیں حراست میں لیا گیا اور ان کے کمپیوٹروں کو اپنی تحویل میں لے لیا گیا۔‘‘

اسانج کا کہنا تھا کہ ایک طرف تو بہت سے ایسے افراد ہیں، جنہیں وکی لیکس کی وجہ سے شرمندگی کا سامنا کرنا پڑا، تو دوسری جانب وہ لوگ بھی وکی لیکس کے خلاف بڑھ چڑھ کر کارروائی میں حصے دار ہیں، جو ایسا کر کے اپنا کیریئر بنانا اور خود کو شہرت دلوانا چاہتے ہیں۔

انہوں نے ایک مرتبہ پھر سویڈش استغاثہ پر الزام لگایا کہ ان کی طرف سے عدالت میں کسی طرح کا کوئی ٹھوس ثبوت پیش نہیں کیا گیا۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ امریکہ ان پر جاسوسی کے الزام کے تحت مقدمہ قائم کرنے کی تیاری کر رہا ہے۔ تاہم انہوں نے یہ بھی کہا کہ وکی لیکس کے خلاف امریکی حکام سے بھی زیادہ سخت کارروائی بینکوں کی جانب سے کی گئی، جن کے حوالے سے حساس معلومات وکی لیکس نے شائع کی۔

Jahresrückblick international 2010 November Flash-Galerie

وکی لیکس نے چند ہفتے قبل امریکی سفارتکاروں کے خفیہ کیبلز شائع کئے تھے

دوسری جانب امریکی محکمہ دفاع نے ایسے الزامات کی تردید کی ہے، جن میں کہا جا رہا تھا کہ حساس فوجی معلومات چوری کرنے کے الزام میں گرفتار Bradley Manning نامی شخص کے ساتھ دوران حراست ناروا سلوک برتا جا رہا ہے۔ امریکہ محکمہ دفاع کے مطابق Bradley Manning کو دوران حراست تمام تر قانونی حقوق حاصل ہیں اور ان کے خلاف کوئی ناروا سلوک نہیں برتا جا رہا ہے۔

رپورٹ : عاطف توقیر

ادارت : افسر اعوان

DW.COM

ویب لنکس