1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

فن و ثقافت

ولیم اور کیٹ کی شادی: ناظرین کی ممکنہ تعداد دو بلین

انتیس اپریل کو جب برطانوی ولی عہد شہزادہ چارلس کے بیٹے شہزادہ ولیم اپنی گرل فرینڈ کیٹ مڈلٹن سے شادی کریں گے تو نصف سے زائد برطانوی باشندے ٹیلی وژن پر یہ تقریب براہ راست دیکھیں گے۔

default

شہزادہ ولیم اپنی گرل فرینڈ کیٹ مڈلٹن کے ساتھ

خبر ایجنسی روئٹرز کے ایک سروے کے مطابق برطانوی شاہی خاندان کے ایک ہر دلعزیز رکن کے طور پر شہزادہ ولیم کی شادی اس سال کا ایک اہم واقعہ ہو گی۔ یہی تقریب دنیا بھر میں ٹیلی وژن پر سب سے زیادہ دیکھا جانے والا واقعہ بھی ہو گی۔ لندن سے ملنے والی رپورٹوں کے مطابق اندازہ ہے کہ اس شادی کی شاندار تقریب کو مختلف ملکوں میں مجموعی طور پر قریب دو بلین انسان لائیو دیکھیں گے۔ شہزادہ ولیم کی Kate Middleton کے ساتھ شادی کی یہ تقریب برطانوی شاہی خاندان کے ٹی وی چینل کے ذریعے انٹرنیٹ پر لائیو دکھائی جائے گی۔ اس طرح یہ پہلا موقع ہو گا کہ برٹش رائل فیملی کے کسی فرد کی شادی کی تقریب کی کوریج اس طرح کی جائے گی۔

Prinz William und Kate Middleton

خبر ایجنسی روئٹرز کے سروے کے مطابق 56 فیصد برطانوی شہریوں نے کہا کہ وہ لازمی طور پر دیکھیں گے کہ تاج برطانیہ کے حقداروں کے طور پر دوسرے نمبر پر آنے والی شخصیت کی شادی کس طرح اپنی تکمیل کو پہنچتی ہے۔ تقریباً ایک چوتھائی جواب دہندگان کا کہنا تھا کہ وہ ٹیلی وژن یا انٹرنیٹ پر یہ تقریب یقینی طور پر نہیں دیکھیں گے۔

برطانیہ میں 29 اپریل جمعہ کا دن اس شادی کی وجہ سے عام چھٹی قرار دیا جا چکا ہے۔ توقع ہے کہ اس روز ہزار ہا برطانوی شہری یا تو مختلف بارز اور پبلک پارکوں میں لگائی گئی بڑی بڑی اسکرینوں پر یہ تقریب دیکھیں گے یا پھر وہ لندن میں بکنگھم پیلیس اور ویسٹ منسٹر ایبے کے درمیانی راستے پر سڑک کے دونوں طرف کھڑے ہوں گے تاکہ دلہا اور دلہن کو وہاں سے گزرتے ہوئے دیکھ سکیں۔

Großbritannien Wahlen David Cameron Konservative

برطانوی وزیر اعظم ڈیوڈ کیمرون

اس عوامی سروے سے یہ بات بھی سامنے آئی کہ برطانیہ میں تین چوتھائی باشندے شاہی خاندان کے بارے میں بڑی دلچسپی کا اظہار کرتے ہیں اور چاہتے ہیں کہ برطانیہ مستقبل میں بھی ایک سلطنت ہی رہے۔ اس کے برعکس 18 فیصد برطانوی شہریوں کو شاہی خاندان یا اس کے ارکان میں کوئی دلچسپی نہیں ہے۔ وہ چاہتے ہیں کہ برطانیہ کو بادشاہت کی بجائے ایک جمہوریہ بنا دینا چاہیے۔ برطانیہ میں موجودہ ملکہ الزابیتھ کو ملکہ بنے ساٹھ سال ہو چکے ہیں۔ اب تک ولی عہد کے منصب پر ملکہ الزابیتھ کے سب سے بڑے بیٹے اور شہزادہ ولیم کے والد شہزادہ چارلس فائز ہیں۔ لیکن برطانیہ میں بہت سے شہریوں کی خواہش یہ بھی ہے کہ مستقبل میں تخت نشینی کے حوالے سے شہزادہ چارلس کو اپنے بیٹے شہزادہ ولیم کے حق میں دستبردار ہو جانا چاہیے۔شہزادہ ولیم کی عمر اس وقت 28 برس اور کیٹ مڈلٹن کی عمر 29 برس ہے۔ ان دونوں کی شادی اور مستقبل کی اولاد کے بارے میں وزیر اعظم ڈیوڈ کیمرون نے کہا ہے کہ اگر ان کے ہاں پہلا بچہ ایک بیٹی ہوئی تو شہزادہ ولیم کے بعد اس بچی کو برطانیہ کی ملکہ بننے کا پورا حق حاصل ہو گا۔

رپورٹ:عصمت جبیں

ادارت: امتیاز احمد

DW.COM

ویب لنکس