1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

صحت

نہاتے ہوئے جلد کا خیال کیسے رکھا جائے؟

کیا آپ ان لوگوں میں شامل ہیں جو کافی دیر تک گرم پانی کا شاور لیتے ہیں؟ اگر ایسا ہے تو پھر آپ کو اپنی جلد کے تحفظ کا خیال رکھنا ہو گا۔

نہانے کے دوران کم وقت تک شاور لینا یا کم پانی صرف کرنا ہمیشہ بہتر رہتا ہے۔ امیریکن اکیڈمی آف ڈرماٹولوجی کی سفارشات کے مطابق اگر آپ جلد کی ڈی ہائیڈریشن یا اس میں پانی کی کمی سے بچنا چاہتے ہیں تو پھر آپ کو شاور لیتے ہوئے یا نہاتے ہوئے پانی کے نیچے 10 منٹ سے زائد وقت نہیں لگانا چاہیے۔ کیونکہ گرم پانی جلد کے قدرتی طور پر موجود چکناہٹ کو کم کرتا ہے۔

گرم پانی کے نیچے زیادہ وقت تک رہنے کے باعث آپ کے خون کی نالیاں کھُل سکتی ہیں جس کی وجہ سے آپ کی جلد سُرخی مائل ہو جاتی ہے یا پھر اس پر نشانات ابھر آتے ہیں۔

Abkühlung unter der Dusche (picture-alliance/dpa/R. Weihrauch)

شاور لیتے ہوئے یا نہاتے ہوئے پانی کے نیچے 10 منٹ سے زائد وقت نہیں گزارنا چاہیے

اس کے علاوہ سخت اثرات رکھنے والے صابن استعمال کرنے کی سفارش بھی نہیں کی جاتی۔ جلد کو صاف کرنے والی دیگر مصنوعات بھی ضروری نہیں ہے کہ وہ ہر طرح کی جلد کے لیے مناسب ہوں۔

جلد کی صفائی کے لیے ایسی مصنوعات جو شدید اثرات نہ رکھتی ہوں اور مصنوعی خوشبو سے بھی پاک ہوں وہ زیادہ بہتر رہتی ہیں۔ خوشبوؤں میں اکثر کیمیکل بھی موجود ہوتے ہیں جو حساس جلد کے لیے مسئلہ بن سکتے ہیں۔

نہانے کے بعد تولیے سے جسم کو رگڑ کر پونچھنے کی بجائے بہتر ہوتا ہے کہ اس پر تولیہ لگا لگا کر اسے خشک کیا جائے، کیونکہ رگڑنا اکثر آپ کی جلد میں جلن کا سبب بنتا ہے۔

DW.COM