1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

نومنتخب صدر اوباما کی قومی سلامتی ٹیم، تبدیلی اور تسلسل میں توازن

اپنی اقتصادی ٹیم کے بعد نو منتخب امریکی صدر باراک اوباما نے اب قومی سلامتی کی ٹیم کا بھی باضابطہ اعلان کردیا ہے۔ توقعات کے عین مطابق باراک اوباما نے ہلری کلنٹن کو نئی وزیر خارجہ نامزد کیا ہے۔

default

باراک اوباما ہلری کلنٹن کی بطور وزیر خارجہ نامزدگی کے بعد سابقہ خاتون اول سے ہاتھ ملاتے ہوئے

ریاست Illinois کے شہر شکاگو میں پیر کے روزایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے باراک اوباما نے اپنی زیر قیادت اگلے سال کے اوائل میں اقتدار میں آنے والی انتظامیہ میں شامل قومی سلامتی ٹیم کا اعلان کیا۔

آئندہ برس 20 جنوری کو صدارتی عہدے پر فائز ہونے والے باراک اوباما نے کہا کہ موجودہ وزیردفاع رابرٹ گیٹس اپنے عہدے پر بدستور فائز رہیں گے۔ اوباما نے مغربی دفاعی اتحاد نیٹو کے سابق سپریم کمانڈر جیمز جونز کو قومی سلامتی کا مشیر نامزد کیاہے۔

Sicherheitskonferenz in München - Robert Gates

رابرٹ گیٹس کو موجودہ وزیر دفاع صدر بش نے بنایا تھا اور وہ آئندہ بھی اس عہدے پر فائز رہیں گے

نئی وزیر خارجہ کے طور ہلری کلنٹن کے نام کا اعلان کرتے ہوئے باراک اوباما نے کہا کہ ہلری کلنٹں بہت ذہین ہیں، اپنی ذمے داریوں سے متعلق ان کا اخلاقی نقطہ نظربہت متاثر کن ہے اور انہیں فخر ہے کہ ہلری کلنٹں امریکہ کی نئی وزیر خارجہ ہوں گی۔

اپنی نامزدگی کے بعد ہلری کلنٹں نے کہا کہ انہیں باراک اوباما کی قیادت میں امریکی انتظامیہ میں شمولیت پر فخر ہے اور انہیں علم ہے کہ یہ نئے فرائض ان کے لئے مشکل ہونے کے ساتھ ساتھ بہت جوش وجذبے کا باعث بھی بنیں گے۔

رابرٹ گیٹس کو وزیر دفاع کے عہدے پر قائم رکھنے کے فیصلے کے حوالےسے بعض حلقوں نے باراک اوباما پر یہ کہتے ہوئےکڑی تنقید بھی کی ہے کہ اوباما بار بارتبدیلی کی بات کررہے تھے تاہم ان کے فیصلوں سے ایسا نہیں لگتا کہ امریکی پالیسیوں میں واقعی کسی تبدیلی کی امید کی جاسکتی ہے۔

Audios and videos on the topic