1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

کھیل

'میں نے کوئی جرم نہیں کیا ہے'

پاکستانی فاسٹ بولر شعیب اختر نے قومی کرکٹ بورڈ کی طرف سے ان پر پانچ سال کی پابندی عائد کرنے کے فیصلے کو امتیازی سلوک سے تعبیر کیا ہے۔

default

راولپنڈی ایکسپریس کے نام سے مشہور کرکٹر شعیب اختر نے اسلام آباد میں آج ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ انہیں چن کر نشانا بنایا گیا۔شعیب نے کہا کہ انہوں نے ایسا کوئی جرم نہیں کیا جس کے پاکستان کرکٹ بورڈ کو ان کے خلاف ایسا فیصلہ کرنا پڑا۔

شعیب کا کہنا تھا کہ وہ آنے والے دنوں میں پی سی بی کی طرف سے ان کے کھیلنے پر عائد پابندی کے خلاف اپیل کریں گے اور یہ کہ اس سلسلے میں ضرورت پڑنے پر وہ اعلیٰ عدالتوں کا رُخ بھی کرسکتے ہیں۔

PCB کی انضباطی کمیٹی نے بورڈ کے ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کے الزام میں شعیب اختر کے کرکٹ کھیلنے پر پانچ سال کی پابندی عائد کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔پی سی بی کے فیصلے کے مطابق شعیب اختر آئیندہ پانچ برس تک اپنے ملک میں یا ملک سے باہر قومی کرکٹ ٹیم کی نمائندگی نہیں کر سکیں گے۔

مشہور پاکستانی بولر اپنے کیریر کے دوران متعدد بار تنازعات کا شکار ہوتے رہے ہیں۔

Audios and videos on the topic