1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

فن و ثقافت

میکسیکو کی سڑک اور قدیم غار اب اہم عالمی ورثہ

میکسیکو کی ایک قدیم سڑک اور دور عتیق کی ایک غار کو دنیا کے اہم ورثے کے طور پر تسلیم کر لیا گیا ہے۔ اس بات کا اعلان عالمی کمیٹی برائے ورثہ نے کیا ہے۔

default

میکسیکو سٹی کا ایک منظر

اقوام متحدہ کے ادارہ برائے ثقافت کی اس خصوصی کمیٹی کا اجلاس آج بھی برزیلیہ میں جاری رہے گا۔ اس کمیٹی نے انسانی ورثے کے حوالے سے ترتیب دی گئی اپنی فہرست میں بحر ہند کے ری یونین آئس لینڈ کی آتش فشانی چوٹیوں کو بھی شامل کر لیا ہے۔

اس مرتبہ ہونے والے اجلاس میں دنیا کے 39 اہم مقامات کو ثقافتی ورثے کا درجہ دینے یا نہ دینے کا فیصلہ کیا جا رہا ہے۔ اب تک 39 میں سے 27 مقامات کو فہرست میں شامل کیا جا چکا ہے۔

اتوار کو نیومیکسیکو سے ٹیکساس تک پھیلی ہوئی ایک پرانی سڑک کو انسانی ورثے کا درجہ دیا گیا۔ میکسیکو کی وسطی وادی اوآکساکا میں موجود یاگل اور میتلہ کی قدیم غاروں کو بھی عالمی فہرست میں شامل کرنے کا اعلان کیا گیا۔

Hoehlenmalerei in Lascaux Frankreich

غار میں بنائے گئے قدیم نقش و نگار

ان غاروں سے تقریبا 10 ہزار برس قدیم بیج ملے تھے۔ ماہرین کے مطابق اب تک دریافت ہونے والے یہ قدیم ترین بیج ہیں اور انسان کے معلوم علم کے مطابق آج سے دس ہزار برس قبل انہیں بیجوں کی مدد سے اس وادی میں زراعت کا آغاز ہوا تھا۔

یونیسکو کی عالمی کمیٹی برائے انسانی ورثہ کے رواں برس ہونے والے اس اجلاس میں چین میں موجود "spectacular red cliffs" اور ’’ڈرامائی قدرتی ستون‘‘ بھی انسانی ورثہ تسلیم کئے گئے ہیں۔ چین کے اس جنوب مغربی علاقے سے حیوانات کی 400 نایاب اقسام بھی دریافت ہوئی تھیں۔

عالمی کمیٹی کی اس ثقافتی فہرست میں اہم مقامات کی تعداد اب 910 ہو گئی ہے۔ اس مرتبہ آتش فشانوں سمیت قدرتی مناظر سے بھرپور متعدد علاقے بھی ثقافتی ورثے کے طور پر تسلیم کئے گئے ہیں۔ ان علاقوں کو اس فہرست میں شامل کرنے کا مقصد ان مقامات پر سیاحت کا فروغ اور حکومتوں کے لئے ان مقامات کی بہتر دیکھ بھال میں معاونت فراہم کرنا ہے۔

رپورٹ: عاطف توقیر

ادارت: ندیم گِل

DW.COM

ویب لنکس