1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

معاشرہ

میکسیکو: شادی کم از کم بھی دوبرس کے لیے

میکسیکو سٹی میں شادی کی کم سے کم مدت دو سال رکھنے کی حکومتی تجویز پر کیتھولک چرچ اور اپوزیشن کی طرف سے کافی ردعمل دیکھنے میں آیا ہے۔

default

 میکسیکو سٹی کی چونتیس سالہ میریانا ویاری، جو اس ہفتے شادی کے بندھن میں بندھنے جا رہی ہیں، کا کہنا ہے کہ اس حوالے سے وقت مقرر کرنا شادی کی معیاد رکھنے کی مانند ہے۔

قانون سازوں کا ماننا ہے کہ اس تجویز کے عمل میں لائے جانے سے بڑھتی ہوئی طلاق کی شرح میں کمی ممکن بنائی جا سکتی ہے۔

Argentinien Legalisierung der gleichgeschlechtlichen Ehe

میکسیکو سٹی میں پہلے ہی اسقاط حمل اور ہم جنس پرستی کو قوانین کی شکل دینے والی پارٹی آف دی ڈیموکریٹک ریولوشن کا کہنا ہے کہ وہ کسی بھی طرح کے تنازعے سے خوفزدہ نہیں

میکسیکو سٹی میں پہلے ہی اسقاط حمل اور ہم جنس پرستی کو قوانین کی شکل دینے والی پارٹی آف دی ڈیموکریٹک ریولوشن کا کہنا ہے کہ وہ کسی بھی طرح کے تنازعے سے خوفزدہ نہیں۔ 

 یہ تجویز لزبیتھ روزاز کی طرف سے پیش کی گئی، جس میں انہوں نے شادی کی کم سے کم معیاد دو برس رکھنے کے بارے میں بات کی، جبکہ زیادہ سے زیادہ معیاد کا فیصلہ شادی شدہ جوڑا خود کرے گا۔ اس عرصے کے بعد وہ چاہیں تو شادی کو جاری رکھیں یا تحلیل کر دیں۔

"ہم اس قدم سے شادی شدہ جوڑے کوایک دوسرے کو سمجھنے کا موقع دینا چاہتے ہیں۔" یہ بات روزاز نے میڈیا سےگفتگو کرتے ہوئے کہی۔

اس کے علاوہ اس معاہدے میں جائیداد کی تقسیم، قیام کے اخراجات اور اولاد کی تحویل اور کفالت کو بھی زیرغور لایا گیا ہے۔

چھیالیس سالہ ایلبرٹو گارشیا کا کہنا ہے کہ حکومت کا یہ قدم ازدواجی رشتے سے منسلک جوڑے کے درمیان محبت پر اثر انداز ہو سکتا ہے۔

نیشنل ایکشن پارٹی اورارچڈیوسیس کے ترجمان نے اس تجویز کی سختی سے مخالفت کرتے ہوئے اسے "مبہم" قرار دیا ہے۔ آنے والے مہینوں میں یہ  تجویز قانون سازی کے باقاعدہ عمل سے گزاری جائے گی، جہاں اسے سخت مخالفت کی سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

رپورٹ: عائشہ حسن

ادارت: عاطف توقیر

DW.COM