1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

کھیل

میڈرڈ اوپن: ڈوکووچ نے نادال کو فائنل میں ہرا دیا

سرب کھلاٹی نوواک ڈوکووچ نے ٹینس کے موقر مقابلے میڈرڈ اوپن میں عالمی نمبر ایک رافائل نادال کو شکست دے دی ہے۔

default

حالیہ کچھ عرصے میں ڈوکووچ ناقابلِ شکست رہے ہیں

بالآخر ہسپانوی ٹینس اسٹار اور عالمی نمبر ایک رافائل نادال کی کلے کورٹ پر لگاتار سینتیس میچوں کی فتوحات کا سلسلہ ٹوٹ گیا۔ اتوار کے روز اسپین کے شہر میڈرڈ میں میڈرڈ اوپن کے فائنل میں نادال کو عالمی نمبر دو سرب کھلاڑی نوواک ڈوکووچ نے اسٹریٹ سیٹس میں سات پانچ اور چھ چار سے ہرا کر ٹرافی اپنے نام کر لی۔ یہ سن دو ہزار گیارہ میں ڈوکووچ کی لگاتار بتیسویں فتح تھی۔

ڈوکووچ کی نظریں اب فرنچ اوپن پر ہیں جو اسی ماہ کھیلی جائے گی۔ میچ کے بعد سرب کھلاڑی کا کہنا تھا کہ رافائل نادال اب بھی ’کنگ آف کلے‘ ہیں اور گرینڈ سلیم فرنچ اوپن جیتنے کے لیے اب بھی فیورٹ ہیں، تاہم میڈرڈ اوپن جیتنے کے بعد وہ بھی فرنچ اوپن کو جیتنے کے لیے پسندیدہ کھلاڑیوں میں سے ایک ہیں۔

Flash-Galerie Sportrückblick 2010

میڈرڈ اوپن سے قبل بارسلونا اوپن نادال کے نام رہا تھا

خیال رہے کہ ڈوکووچ اس سے قبل نادال کو کبھی بھی کلے کورٹ پر شکست نہیں دے سکے تھے تاہم اس برس انہوں نے چھ ٹورنامنٹس جیت ہیں جن میں سال کا پہلا گرینڈ سلیم آسٹریلین اوپن، انڈین ویلز اور میامی کے ٹورنامنٹ شامل ہیں جن کے فائنلز میں ڈوکووچ نے نادال کو ہرایا تھا۔

میڈرڈ اوپن کے سیمی فائنل میں رافائل نادال نے سابق عالمی نمبر ایک سوئس کھلاڑی راجر فیڈرر کو تین سیٹس میں شکست دی تھی۔ ٹینس کی دنیا میں راجر فیڈرر اور نادال کی تاریخی مسابقت کے بعد اب محسوس ہوتا ہے کہ نادال اور ڈووکوچ کی ’رائولری‘ کا دور ہے۔ اگر ڈوکووچ فرنچ اوپن جیتنے میں کامیاب ہو جاتے ہیں تو وہ عالمی نمبر ایک کا رینک بھی حاصل کر لیں گے۔

رپورٹ: شامل شمس⁄ خبر رساں ادارے

ادارت: عدنان اسحاق