1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

فن و ثقافت

مینڈیلا اکانوے برس کے ہو گئے

جنوبی افریقہ کے سابق صدر نیلسن مینڈیلا نے اکانوے برس کے ہونے پر جوہانسبرگ میں اپنی سالگرہ منائی۔ اس موقع پر دنیا بھر سے انہیں تہنیتی پیغامات موصول ہوئے۔

default

مینڈیلا اعلیٰ ترین انسانی اقدار کی جیتی جاگتی مثال ہیں، بان کی مون

جنوبی افریقہ کے پہلے سیاہ فام صدر اور نوبیل امن انعام یافتہ رہنما نیلسن مینڈیلا نے اپنی اکانویں سالگرہ جنوبی افریقہ کے دارالحکومت جوہانسبرگ میں سادگی سے منائی اور دنیا بھر میں اپنے پرستاروں سے کہا کہ وہ اس موقع پر کوئی اچھا کام کرکے ان کو یاد کریں۔ ان کی سالگرہ کے موقع پر دنیا بھر کے لوگوں پر زوردیا گیا کہ وہ روزانہ سڑسٹھ منٹ سماجی خدمات انجام دینے کے لئے وقف کریں۔ سڑسٹھ کاعدد مینڈیلا کی زندگی کے اُن برسوں کی نشاندہی کرتا ہے جو انہوں نے جنوبی افریقہ میں جمہوریت کےقیام کے لئے وقف کر رکھے تھے۔

Nelson Mandela 1956

نیلسن مینڈیلا کونسل پرست حکمرانوں نے ستائیس برس تک قید میں رکھا

نیلسن مینڈیلا کی سالگرہ کے موقع پر ان کے اہلِ خانہ کے علاوہ جنوبی افریقہ کے سابق سفید فام نسل پرست حکمرانوں کے خلاف ان کے ہمراہ جد و جہد کرنے والے افراد بھی شریک ہوئے۔ واضح رہے کہ نیلسن مینڈیلا کونسل پرست حکمرانوں نے ستائیس برس تک قید میں رکھا۔ ایک طویل جدوجہد کے بعد مینڈیلا جنوبی افریقہ میں جمہوریت رائج کرنے میں کامیاب ہوئے اور انیس سو نوّے میں وہ جنوبی افریقہ کے پہلے سیاہ فام صدر منتخب ہوئے۔ انیس سو ترانوے میں ان کو نوبل انعام برائے امن سے نوازا گیا۔

نیلسن مینڈیلا کی سالگرہ کے موقع پر اقوامِ متحدہ کے سیکرٹری جنرل بان کی مون نے کہا کہ مینڈیلا اعلیٰ ترین انسانی اقدار کی جیتی جاگتی مثال ہیں۔ بان کی مون نے مینڈیلا کو سراہتے ہوئے کہا کہ ایک جمہوری، کثیر النسلی اور آزاد جنوبی افریقہ کے لیے مینڈیلا کی جدوجہد قابلِ قدر ہے۔ بان کی مون نے یہ بھی کہا کہ جس طرح مینڈیلا نے اپنے خلاف ظلم کرنے والے افراد کی طرف دوستی کا ہاتھ بڑھایا اس سے ثابت ہوتا ہے کہ وہ ایک عظیم شخص ہیں۔

نیلسن مینڈیلا کی سالگرہ کو ان کے فلاحی ادارے نے ’مینڈیلا ڈے‘ کا نام دیا اور اس مناسبت سے ہر برس اٹھارہ جولائی کو یومِ مینڈیلا منانے کا اعلان کیا۔ اقوامِ متحدہ نے بھی اس اقدام کی توثیق کرتے ہوئے ہر برس اٹھارہ جولائی کو یومِ مینڈیلا منانے کا اعلان کیا ہے اور اس کو اقوامِ متحدہ کے بین الاقوامی دن کا درجہ دیا ہے۔

Merkel bei Mandela

وفاقی جرمن چانسلر انگیلا میرکل اور نیلسن مینڈیلا

جنوبی افریقہ کے صدر جیکب زوما نے نیلسن مینڈیلا کو امید کی ایک کرن سے تعبیر کیا ہے اور کہا ہے کہ اگر کسی شخص نے پوری دنیا کو اپنی عاجزی اور اچھے کاموں سے متاثر کیا ہے تو وہ نیلسن مینڈیلا ہیں۔

اکانوے سالہ نیلسن مینڈیلا نے صرف ایک مدّت کے لیے جنوبی افریقہ کے صدر کے طور پر فرائض سر انجام دیے۔ کسی سرکاری عہدے پر نہ ہوتے ہوئے بھی انہوں نے اپنی زندگی فلاحی کاموں کے لیے وقف کر رکھی ہے۔ زیادہ تر ان کے فلاحی کاموں میں بچّوں کی بہبود اور ایڈز کے خلاف مہمات شامل ہیں۔