1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

مہاجرین کا بحران

مہاجر بچی کو جنسی طور پر ہراساں کرنے پر پاکستانی کو سزا

جرمن دارالحکومت برلن کے ایک ریفیوجی سینٹر میں ایک مہاجر بچی کو جنسی طور پر ہراساں کرنے والے ایک پاکستانی کو سزا سنا دی گئی۔ عدالت نے پاکستانی نوجوان کو ڈیڑھ برس کی سزا سنائی ہے۔

برلن کے ریفیوجی مرکز میں جس بچی کو اس 27 سالہ پاکستانی نے جنسی طور پر ہراساں کیا تھا، وہ عراق سے تعلق رکھتی ہے اور اس واقعے کے وقت اُس کی عمر صرف چھ برس تھی۔ اس کا خاندان خانہ جنگی کے شکار ملک عراق سے مہاجرت کر کے برلن میں پناہ لیے ہوئے تھا۔

 جرمن عدالت میں ستائیس برس کے پاکستانی نوجوان نے اپنے جرم کا اعتراف کرتے ہوئے عدالت پر واضح کیا کہ وہ اپنے اِس اچانک فعل کا ارتکاب کرنے پر حیرت زدہ اور شرمندہ ہے۔

پاکستانی نوجوان نے برلن شہر کے شمال مغربی علاقے میں واقع موابٹ ریفیوجی مرکز میں مقیم عراقی مہاجر خاندان کی بچی کو بہلا پھسلا کر اسے جنسی طور پر ہراساں کیا۔

Deutschland Moschee-Verein Fussilet 33 in Berlin (picture-alliance/dpa/R. Jensen)

برلن کے موابٹ علاقے میں مسلمانوں کی ایک مسجد بھی ریفیوجی مرکز کے قریب واقع ہے

برلن شہر کی ٹیئرگارٹن کورٹ میں اِس سلسلے میں عدالتی کارروائی مکمل کی گئی۔ استغاثہ نے تمام ثبوت کے ساتھ ثابت کیا کہ مجرم اس گھناؤنے جرم کا مرتکب ہوا تھا۔ عدالت نے پاکستانی شہری کے فعل کی مذمت کرتے ہوئے اُسے ایک سال اور آٹھ ماہ کی زیرنگرانی قید کا حکم سنایا۔

زیرنگرانی قید (sentenced to probation) سے مراد ایسی سزا ہوتی ہے، جس میں مجرم قید کی تمام مدت پولیس کی نگرانی میں مکمل کرتا ہے لیکن وہ جیل میں مقید نہیں رکھا جاتا۔ اس دوران اسے پولیس کی مقرر کردہ حدود سے باہر جانے کی اجازت بھی نہیں ہوتی۔ جس پاکستانی کو یہ سزا دی گئی ہے، اُس پر عدالت نے ایک نگران بھی مقرر کیا ہے اور اس تمام عرصے میں یہ اپنے تمام افعال اور امور اِس خصوصی نگران کو مطلع کرتے ہوئے مکمل کرے گا۔ کسی بھی کوتاہی پر وہ جیل منتقل کیا جا سکے گا۔

یہ امر اہم ہے کہ گزشتہ برس ستمبر میں متاثرہ لڑکی کے عراقی والد کو اُس وقت پولیس نے ہلاک کر دیا تھا، جب وہ چاقو سے اُس پاکستانی پر حملہ آور ہوا تھا، جس نے اُس کی بیٹی کے ساتھ زیادتی کرنے کی کوشش کی تھی۔ پولیس کی فائرنگ سے زخمی ہونے والا یہ عراقی کئی ایام تک ہسپتال میں زخمی رہنے کے بعد چل بسا تھا۔

ملتے جلتے مندرجات