1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

مہاتما گاندھی کی جگہ مودی؟

بھارت میں کھڈی اور سوتی صنعت کے کیلنڈر پر روایتی طور پر آزادی کے ہیرو مہاتما گاندھی کی شبیہ ہوتی تھی۔ اس بار کے کیلنڈر سے گاندھی کی چرخے والی تصویر غائب ہے اور وہاں مودی دکھائی دے رہے ہیں۔ اس پر شدید تنقید کی جا رہی ہے۔

جمعے کے روز یہ کیلنڈر سامنے آنے کے بعد بھارتی میڈیا پر یہ بحث جاری ہے کہ مہاتما گاندھی کی تصویر ہٹا کر اُس جگہ  وزیراعظم نریندر مودی کی تصویر کیوں لگا دی گئی ہے۔

روایتی طور پر کھڈی کی صنعت کے تشہیر کے لیے ہر سال شائع کیے جانے والے پوسٹر پر چرخے کے ساتھ سوتی شال اوڑھے گاندھی جی دکھائی دیتے تھے۔ یہ تصویر اس صنعت کی ایک طرح سے شناخت تھی۔

حکومتی سرپرستی میں چلنے والے کھڈی ویلج انڈسٹری کمیشن (KVIC) نے اپنے اس فیصلے کا دفاع کرتے ہوئے مودی کی تصویر کے استعمال کو درست قرار دیا ہے۔ سن 2017 کے کیلنڈر اور ڈائری پر شائع ہونے والی تصویر میں مودی چرخے کے ساتھ بالکل مہاتما گاندھی کے انداز میں بیٹھے ہیں۔

Mahatma Gandhi am Webstuhl (Getty Images/Hulton Archive)

گاندھی کی شبیہ روایتی طور پر اس کیلینڈر پر چھپا کرتی تھی

اس حکومتی ادارے کے سربراہ کمار سکسینا نے میڈیا سے بات چیت میں کہا، ’’وہ (مودی) کھڈی کے سب سے بڑے سفیر ہیں۔‘‘

سکسینا نے کہا کہ ماضی میں بھی کئی مواقع پر مختلف شخصیات کی تصاویر ان کیلنڈرز پر شائع کی جا چکی ہیں، جس کا مقصد اس صنعت کی ترویج و تشہیر ہوتا ہے۔

مقامی میڈیا کی رپورٹوں کے مطابق KVIC سے وابستہ متعدد مزدوروں نے جمعے کے روز نیا کیلنڈر سامنے آنے کے بعد خاموش احتجاج بھی کیا۔ جب کہ اپوزیشن پارٹیوں کی جانب سے اس معاملے پر شدید تنقید کی جا رہی ہے۔

اپوزیشن رہنما اروِند کیجریوال نے اپنے ایک ٹوئیٹر پیغام میں کہا:’’گاندھی بننے کے لیے کئی برسوں کی قربانی کی ضرورت ہوتی ہے۔‘‘

اپنے پیغام میں ان کا کہنا تھا، ’’آپ چرخا چلانے کی اداکاری کر کے گاندھی نہیں بن سکتے۔ اس پر صرف ہنسا جا سکتا ہے۔‘‘