1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

من موہن سنگھ نے اعتماد کا ووٹ حاصل کر لیا

بھارتی پارلیمان میں آج تحریک اعتماد پر ووٹنگ ہوئی‘ حکومت کی حمایت میں 275جبکہ اس کے خلاف 256ووٹ پڑے۔

default

سنگھ از کنگ: بھارتی وزیر اعظم منموہن سنگھ پارلیمان میں اعتماد کا ووٹ حاصل کرنے میں کامیاب ہوگئے

آج لوک سبھا میں ووٹنگ تاخیر سے شروع ہوئی جس کی وجہ بھارتیہ جنتا پارٹی کے چند اراکین کا وزیرِ اعظم پر الزام عائد کرنا تھا کہ ان کو حکومت کے حق میں ووٹ ڈالنے کے لیے رشوت دی گئی تھی۔ بھارت امریکہ جوہری معاہدے کے حوالے سےحال ہی میں اختلافات پیدا ہونے کے باعث حکومتی اتحاد میں شامل بائیں بازو کی جماعتوں نے اپنی حمایت واپس لے لی تھی۔

بھارت میں یہ حکومتی بحران دو ہفتے قبل اُس وقت شروع ہوا تھا، جب مخلوط حکومت میں شامل بائیں بازو کی بہت سی جماعتیں امریکہ کے ساتھ ایٹمی شعبے میں تعاون کے مجوزہ سمجھوتے پر احتجاج کرتے ہوئے حکومت سے الگ ہو گئی تھیں۔ ان جماعتوں کی علٰیحدگی کے بعد من موہن سنگھ حکومت پارلیمان میں اکثریت سے محروم ہو گئی تھی۔ امریکہ کے ساتھ جوہری سمجھوتے میں یہ کہا گیا ہے کہ تیس سال سے زیادہ کے وقفے کے بعد امریکہ ایک بار پھر بھارت کے ساتھ ایٹمی ٹیکنالوجی کی تجارت کر سکتا ہے۔ اِس سمجھوتے کی کامیابی کے امکانات پر بھارتی وزیر اعظم من موہن سنگھ اور امریکی صدر جورج ڈبلیو بُش کے درمیان آٹھ جولائی کو بھی تبادلہء خیال ہوا تھا، جب دونوں رہنما گروپ جی ایٹ کی سربراہ کانفرنس کے موقع پر جاپان میں ملے تھے۔

اُدھر امریکہ نے بھارتی وزیر اعظم من موہن سنگھ کو اِس سمجھوتے کے حق میں اُن کی جدوجہد کے لئے بے حد سراہا ہے۔