1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

معاشرہ

ممتاز قادری کو پھانسی، سوشل میڈیا پر شدید ردعمل

پنجاب کے سابق گورنر سلمان تاثیر کے قتل کے جرم میں ممتاز قادری کو پھانسی دیے جانے پر ملک بھر میں مذہبی جماعتوں اور تنظیموں نے احتجاجی مظاہروں میں حصہ لیا۔ سوشل میڈیا پر بھی اس حوالے سے شدید ردعمل دیکھنے میں ملا۔

پاکستان کے صوبے پنجاب کے سابق گورنر سلمان تاثیر کو قتل کرنے کے جرم میں ممتاز قادری کو اتوار اور پیر کی درمیانی شب پھانسی دے دی گئی تھی۔ ممتاز قادری کو پھانسی دیے جانے کی خبر نشر ہونے کے بعد راولپنڈی اور اسلام آباد سمیت ملک کے دیگر شہروں میں مظاہرین سڑکوں پر نکل آئے اور احتجاجاً بعض شاہراہیں بند کر دیں۔

سوشل میڈیا پر جہاں ممتاز قادری کو پھانسی دیے جانے کے خلاف ردعمل دیکھنے میں آیا، وہیں بہت سے افراد نے اس فیصلے کو پاکستانی معاشرے کے لیے ایک مثبت اقدام ٹہرایا۔

سوشل میڈیا پر کئی افراد نے ممتاز قادری کی پھانسی پر احتجاج کرنے والے افراد کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا۔

واضح رہے راولپنڈی کی انسداد دہشت گردی کی عدالت نے ممتاز قادری کو یکم اکتوبر 2011ء کو دو بار سزائے موت اور جرمانے کا حکم سنایا تھا۔ ممتاز قادری نے اس سزا کے خلاف اسلام آباد ہائی کورٹ میں اپیل دائر کی تھی، جس پر عدالت نے گزشتہ سال گیارہ فروری کو انسداد دہشت گردی کی دفعات کے تحت ممتاز قادری کو سنائی گئی سزائے موت کو کالعدم قرار دے دیا تھا۔ تاہم عدالت نے فوجداری قانون کے تحت اس کی سزائے موت کو برقرار رکھا گیا۔

بعد ازاں سپریم کورٹ نے ملزم کی رحم کی اپیل پر فیصلہ سناتے ہوئے نہ صرف موت کو سزا کو برقرار رکھا تھا بلکہ انسداد دہشت گردی کی دفعات کو بھی بحال کر دیا تھا۔ اس کے بعد صدر ممنون حسین نے بھی ممتاز قادری کی معافی کی اپیل مسترد کر کے سزا کو برقرار رکھا تھا۔