1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

کھیل

ممبئی کے لڑکے نے ’کرکٹ کی نئی تاریخ‘ رقم کر دی

ممبئی کے ایک پندرہ سالہ لڑکے نے ایک اننگ میں ایک ہزار نو رنز بنا کر ایک ریکارڈ بنا دیا ہے۔ دنیا کرکٹ میں یہ حیرت انگیز ریکارڈ ساز کھلاڑی اس اسکور پر بھی ناٹ آؤٹ رہا۔

رنز کے پہاڑکی اس اننگزز میں پندرہ سالہ پرانو دھناواد نے ایک بولر کے چھ اووروں میں 142 رنز بنانے کا ریکارڈ بھی بنا ڈالا۔ رواں ہفتے کے آغاز پر اس غیرمعمولی اننگز نے 114 برس پرانے ریکارڈ کو توڑ دیا ہے۔

اس میچ کی کوالٹی پر کئی طرح سے سوالات اٹھائے جا رہے ہیں۔ ناقدین کا کہنا ہے کہ حریف ٹیم انتہائی کمزور تھی، جس میں کچھ بچوں کی عمریں 12 برس تھیں اور ان میں سے کچھ تو پہلی مرتبہ ’ہارڈ بال‘ یا’سخت گیند‘ سے کھیل رہے تھے۔ اس کے علاوہ اس میچ میں اس لڑکے کے 21 کیچیز بھی چھوڑے گئے، جب کہ باؤنڈری کا حجم تیس میٹر تھا۔

تاہم بھارتی کرکٹ حکام کا کہنا ہے کہ اس بابت شکوک و شبہات پیدا کر کے کرکٹ کی تاریخ کے اس انمول واقعے کو پس پشت نہیں ڈالنا چاہیے، کیوں کہ دھناواد نے واقعی ایک تاریخ رقم کی ہے۔

بھارتی کرکٹ کالم نگار ایاز میمن نے خبر رساں ادارے اے ایف پی سے بات چیت میں کہا، ’’آپ کو یہ بات تسلیم کرنا ہو گی، کہ یہ اس لڑکے کی غیرمعمولی کارکردگی ہے۔‘‘

میمن نے مزید کہا، ’’حریف ٹیم کا معیار اور میدان کا رقبہ کچھ بھی ہو، مگر حقیقت یہ ہے کہ جب آپ 150 یا 200 رنز بنا لیتے ہیں تو وکٹ گر جانے کا خیال آپ کے ذہن میں ہوتا ہے۔ مگر ایک ہزار رنز تک کھیلتے رہنا، ایک طرف تو زبردست جسمانی کاوش سے ممکن ہے، مگر دوسری جانب اس کے لیے ذہنی تیاری بھی درکار ہوتی ہے۔‘‘

اس صحافی کا کہنا تھا کہ باؤنڈری تمام کھلاڑیوں کے لیے ایک سی تھی، اس لیے یہ نہیں کہا جا سکتا کہ میدان چھوٹا ہونے کہ وجہ سے اس لڑکے نے اتنے رنز بنا لیے۔

اس نوجوان نے آرتھر کولِنز کا انگلینڈ میں سن 1899ء میں 628 رنز کا ریکارڈ توڑ دیا۔ یہ پہلا موقع ہے کہ دنیائے کرکٹ میں کسی کھلاڑی کو ’فور ڈیجیٹ رنز‘ کرنے کا اعزاز حاصل ہوا ہے۔ اس نوجوان نے یہ رنز 395 منٹ پر محیط اپنی اننگز میں بنائے۔

اس میچ میں کے سی گاندھی ہائی اسکول نے 1465 رنز تین کھلاڑی آؤٹ پر اپنی اننگز ڈیکلیئر کر دی تھی۔