1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

ممبئی حملے: تحقیقات کا نیا رخ

گزشتہ برس بھارتی شہر ممبئی میں ہونے والے حملوں کی تحقیقات نے نیا رخ اس وقت اختیار کیا جب ڈیود ہیڈلے کوحراست میں لینے کے لیے بھارتی حکام کا مطالبہ زور پکڑنے لگا۔

default

واشنگٹن میں موجود ڈیوڈ ہیڈلے پر الزام ہے کہ اس نے نومبر دوہزار آٹھ میں ممبئی میں حملوں کا نشانہ بننے والے مقامات کی جاسوسی کی اور اس سے حاصل ہونے والی معلومات ان حملوں میں ملوث پاکستانی تنطیم لشکر طیبہ کو دیں۔

بھارت ان حملوں کی ذمہ داری کالعدم پاکستانی عسکری تنظیم لشکر طیبہ پر ڈالتا ہے۔ دونوں ملکوں کے درمیان پہلے سے کشیدہ تعلقات مزید کشیدگی کا شکار ہیں۔ پاک بھارت قیام امن مذاکرات جنہیں پچھلے برس روک دیا گیا تھا اب تک شروع نہیں ہو سکے۔ بھارت کا موقف ہے کہ دونوں ملکوں کے درمیان مذاکرات اس وقت تک نہیں ہو سکتے جب تک پاکستان ان حملوں کے ذمہ داروں کو انصاف کے کٹہرے میں نہیں لاتاجبکہ پاکستان کا کہنا ہے کہ اگر بھارت اسلام آباد کو ان واقعات میں ملوث افراد کے حوالے سے معلومات فراہم کرتا ہے تو وہ ان افراد کو اپنے ملک کے قانون کے تحت اپنی عدالتوں سے سزا دلوائے گا۔ بھارت پاکستان پر ناکافی اقدامات کا الزام عائد کر رہا ہے جبکہ پاکستان بھارتی معلومات کو ناکافی قرار دیتا ہے۔

انٹرویو: عصمت جبین

ادارت عاطف توقیر

Audios and videos on the topic