1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

ممبئی حملہ آوروں کو پاکستانی ایجنسیوں کی حمایت حاصل تھی: من موہن سنگھ

بھارت نے ایک بار پھر پاکستان پر حالیہ ممبئی حملوں میں ملوث ہونے کا الزام عائد کیا ہے۔

default

بھارتی وزیر اعظم کے تازہ بیان پر اسلام آباد نے سخت ردّ عمل ظاہر کیا ہے

بھارتی ریاستوں کے وُزرائے اعلیٰ کے ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم من موہن سنگھ نے کہا کہ جس مہارت سے یہ دہشت پسندانہ حملے کئے گئے، اُسے دیکھتے ہوئے یہی لگتا ہے کہ حملہ آوروں کو اسلام آباد کی سرکاری ایجنسیوں کی تائید و حمایت حاصل تھی۔

Bildgalerie Jahresrückblick 2008 November Indien

نومبر میں مسلح شدت پسندوں نے بھارتی شہر ممبئی کے ہوٹل تاج، اوبیرائے اور ٹرائیڈنٹ کو اپنے حملوں کا نشانہ بنایا

بھارتی وزیر اعظم من موہن سنگھ نے کہا:’’یہ بات بالکل واضح ہے کہ گذشتہ سال نومبر میں ممبئی میں دہشت پسندانہ حملے پاکستان میں قائم تنظیم لشکرِ طیبہ نے کئے۔ اب تک کی جانے والی تحقیقات کی بنیاد پر، جس میں اُن غیر ممالک کی ایجنسیاں بھی شامل ہیں، جن کے شہری اِن حملوں میں مارے گئے، اِس بات کے کافی شواہد ہیں کہ جس فوجی مہارت اور صفائی سے یہ حملہ کیا گیا، اِسے پاکستان کی سرکاری ایجنسیوں کی ضرور مدد حاصل ہوگی۔‘‘

پاکستان نے تاہم اِن الزامات کو غیر ذمہ دارانہ اور منفی پراپیگنڈہ قرار دیتے ہوئے مسترد کر دیا ہے۔ اسلام آباد میں وزارتِ خارجہ کے ایک بیان میں کہا گیا کہ اِس طرزِ عمل سے نہ صرف دونوں ملکوں کے درمیان کشیدگی بڑھ سکتی ہے بلکہ ممبئی حملوں کے ذمہ دار عناصر تک پہنچنے کے امکانات بھی معدوم ہو سکتے ہیں۔

DW.COM

Audios and videos on the topic