1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

ملک کے مفاد میں مستعفی ہوتا ہوں :پرویز مشرف

پیر کے دن پرویز مشرف نے ایوان صدر سے اپنی ایک براہ راست نشریاتی تقریر میں صدارت کے عہدے سے مستعفی ہونے کا اعلان کر دیا ہے۔ انہوں نےجذبات سے بھرے عوامی خطاب میں کہا کہ یہ فیصلہ ملک کے بہتری اور فلاح کے لئے کیا گیا ہے۔

default

اطلاعات کے مطابق انہوں نے اپنا استعفی قومی اسمبلی کے اسپیکر کو دیا اور اس کی منظوری کے ساتھ ہی چیئر مین سینٹ محمد میاں سومرو پاکستان کے قائم مقام صدر کے فرائض سر انجام دیں گے۔

تقریبا ایک گھنٹے کے عوامی خطاب میں پرویز مشرف نے اپنی پالیسیوں کو اجمالی جائزہ پیش کرتے ہوئے کہا کہ برسر اقتدار سیاسی اتحاد کی طرف سے لگائے جانے والے الزمات بے بنیاد ہیں ۔

جنرل ریٹائرڈ پرویز مشرف نے کہا کہ وہ اپنے دور اقتدار کے دروان ہونےوالی معاشی ترقی کی جامع رپورٹ جلد ہی عوام کے سامنے پیش کریں گے جس سے معلوم ہو سکے گا کہ انہوں نے کس طرح پاکستان کی خدمت کی۔

انہوں نے کہا کہ وہ مواخذے سے نہیں ڈرتے اور وہ جانتے ہیں کہ وہ بے گناہ اور بے قصور ہیں تاہم مستعفی اس لئے ہوئے کہ قوم کے وقار کو ٹھیس نہ پہنچے اور عالمی برادری میں پاکستان کا نام خراب نہ ہو۔

انہوں نے اپنے تمام ساتھیوں کی خدمات کو سراہا اور کہا کہ اللہ کرے کہ ان کے استعفی دینے کے بعد ملک سیاسی اور اقتصادی صورتحال میں بہتری آئے۔