1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

ملک ریاض اور آرمی چیف کا کوئی تعلق نہیں، ترجمان پاک فوج

پاکستان کی فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے سربراہ لیفٹیننٹ جنرل عاصم باجوہ نے اس خبر کی تردید کی ہے کہ ریئل اسٹیٹ ٹائیکون ملک ریاض کا آرمی چیف جنرل راحیل شریف کے ساتھ میل ملاپ یا تعلقات ہیں۔

دو روز قبل خبر رساں ایجنسی روئٹرز کی ایک رپورٹ شائع ہوئی تھی جس میں کہا گیا تھا کہ پاکستان کے سب سے بڑے ریئل اسٹیٹ ٹائیکون اور انتہائی طاقتور کاروباری شخصیت ملک ریاض پاکستان کی فوج کے ساتھ دوستانہ تعلقات رکھتے ہیں اور ان کے فوج کے ساتھ پراپرٹی کے پانچ مشترکہ منصوبے بھی ہیں۔

تاہم بدھ 30 مارچ کو آئی ایس پی آر کے سربراہ عاصم باجوہ نے اس خبر کی تردید کر دی۔ انہوں نے اس حوالے سے اپنی ٹوئیٹ میں لکھا، ’’میں ان بے بنیاد الزامات کی مکمل طور پر تردید کرتا ہوں۔‘‘

انہوں نے یہ بھی لکھا کہ آرمی چیف کا ملک ریاض کے ساتھ نہ ہی کوئی تعلق ہے اور نہ ہی کوئی میل ملاپ۔

واضح رہے کہ ملک ریاض کے بارے میں روئٹرز کی رپورٹ میں لکھا گیا تھا کہ وہ اپنے کام کرانے کے لیے سیاست دانوں، ججوں اور پاکستان کی خفیہ ایجنسی آئی ایس آئی تک کو رشوت دے چکے ہیں۔ یہ خبر میڈیا اور خصوصاﹰ سوشل میڈیا پر پھیل گئی تھی اور اس پر کافی بحث و مباحثہ کیا جا رہا تھا۔

DW.COM