1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

مصری سپاہیوں کی ہلاکت پر اسرائیل کا اظہار افسوس

اسرائیلی وزیردفاع ایہود باراک نےاسرائیلی فضائی کارروائی کے نتیجے میں مصری سپاہیوں کی ہلاکت پرافسوس کا اظہار کیا ہے۔ مصری سیکورٹی فورسز کی ہلاکت کے بعد قاہرہ نے اسرائیل میں تعینات اپنے سفیرکو واپس بلوانے کا فیصلہ کیا تھا۔

default

مصرحکومت نے کہا تھا کہ اسرائیل سے سفیر بلوانے کے اس فیصلے کو اس وقت تک واپس نہیں لیا جائے گا، جب تک اسرائیل معافی نہیں مانگتا۔ قاہرہ حکومت کے اس فیصلے کے بعد اسرائیلی سفارت کاروں نے اس حوالے سے اپنی حکمت عملی واضح کرنے کے لیے آج مشاورت کا عمل شروع کیا تھا۔ اسرائیلی وزارت خارجہ کے ترجمان Yigal Palmor نے آج صبح خبر رساں اداروں کو بتایا تھا، ’مصری حکومت نے اسرائیل میں تعینات اپنے سفیر کو احتجاجی طور پر واپس بلوانے کا اعلان کیا ہے، ہم اس حوالے سے کوئی حل نکالنے کے لیے اعلیٰ سطحی مشاورت کر رہے ہیں‘۔ اسرائیلی سفارت کاروں کی ایک ہنگامی ملاقات کے بعد وزیر دفاع ایہود باراک نے کہا کہ جنگجوؤں کا تعاقب کرتے ہوئے مصری سپاہیوں کی جو ہلاکت ہوئی ہے اس پر اسرائیل کو افسوس ہے۔

اسرائیلی وزیر دفاع نے مزید کہا کہ جمعرات کو رونما ہوئے اس واقعے کے بارے میں ترک فوج کے ساتھ مل کر مشترکہ تحقیقات کی جائیں گی۔ اسرائیلی حکام نے کہا ہے کہ اس کی افواج کی یہ نیت ہر گز نہیں تھی کہ وہ مصری سیکورٹی گارڈز کو کوئی نقصان پہنچائے۔

دوسری طرف مصری کابینہ نے قاہرہ میں تعینات اسرائیلی سفیر کو طلب کر کے اپنا احتجاج بھی ریکارڈ کروایا۔ قاہرہ حکومت نے اسرائیلی قیادت سے مطالبہ کیا تھا کہ وہ اپنے اس بیان پر معافی مانگیں کہ جزیرہ نما سینائی میں مصری فوج کی گرفت ڈھیلی پڑ گئی ہے۔

NO FLASH Israel Eilat Anschläge

جنوبی اسرائیلی علاقے ایلات میں جمعرات کو جنگجوؤں نے سلسلہ وار حملے کیے تھے

جمعرات کو جنوبی اسرائیلی علاقے ایلات میں ہوئے سلسلہ وار حملوں کے بعد، اسرائیلی فضائیہ نے جنگجوؤں کے خلاف کارروائی کی تھی، جس کے نتیجے میں ایک مصری فوجی اور چار سرحدی سکیورٹی گارڈز ہلاک ہو گئے تھے۔ مصری اسرائیلی سرحد پر پیش آنے والے اس واقعہ میں سات مصری سکیورٹی گارڈز زخمی بھی ہوئے تھے۔

مصر میں عوامی انقلاب اور صدر حسنی مبارک کے اقتدار سے الگ ہونے کے بعد رونما ہونے والے اس واقعہ کو اسرائیل اور مصر کے مابین سفارتی تعلقات کے لیے ایک امتحان قرار دیا جا رہا تھا۔ اسرائیلی حکومت نے جزیرہ نما سینائی میں سیکورٹی کی موجودہ صورتحال پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔ اس کا کہنا ہے کہ غزہ میں موجود حماس کے جنگجو سینائی صحرا کے راستے ایلات پہنچے، جہاں انہوں نے دہشت گردانہ کارروائی میں آٹھ اسرائیلیوں کو ہلاک کر دیا۔

دوسری طرف مصری حکومت نے اسرائیل کی طرف سے عائد کیے ان الزامات کو رد کیا ہے کہ سینائی میں اس کی فوج کی گرفت کمزور ہوئی ہے۔ قاہرہ کے بقول اسرائیلی حکومت اپنی سرحدوں کی مؤثر حفاظت کرنے میں ناکام ہوئی ہے اور جلد بازی میں غیر ذمہ دارانہ بیانات جاری کر رہی ہے۔ گزشتہ دس سالوں کے دوران پہلی مرتبہ مصر نے اسرائیل سے اپنے سفیر کو واپس بلوانے کا فیصلہ کیا ہے۔

دریں اثناء مصر بھر میں آج بھی لوگوں کی ایک بڑی تعداد نے مصری سیکورٹی اہلکاروں کی ہلاکت پر احتجاج کیا۔ قاہرہ میں اسرائیلی سفارتخانے کے باہر منعقد کیے ایک مظاہرے میں لوگوں نے اسرائیلی حکومت کی پالیسیوں کے خلاف نعرہ بازی کی اور اسرائیل کا پرچم بھی نذر آتش کیا۔

رپورٹ: عاطف بلوچ

ادارت: حماد کیانی

DW.COM

ویب لنکس