1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

فن و ثقافت

مشہور پلے بوائے’زاکس‘ نے خود کشی کر لی

جرمن نژاد سوئس باشندے اور افسانوی حیثیت کے حامل ’پلے بوائے‘ گُنٹر زاکس نے خود کشی کر لی ہے۔ 78سالہ زاکس کے گھر والوں نے بتایا کہ وہ اپنی بیماری کی وجہ سے یہ اقدام اٹھانے پر مجبور ہوئے۔

default

گنٹر زاکس کو اپنی سابقہ بیوی بریگیٹے بارڈوٹ کی وجہ سے بھی بہت شہرت حاصل ہوئی

گنٹر زاکس نے سوئٹزرلینڈ کے اپنے گھر میں اپنی جان لی۔ ان کے گھر والوں نے سوئس پولیس کے حوالے زاکس کا ایک خط کیا ہے، جس پر تحریر ہےکہ بیماری ’ A ‘ نے ان کی دماغی حالت کو بہت متاثر کیا ہے،’’ اپنی آپ پر قابو نہ ہونا ایک ذلت آمیز کیفیت ہوتی ہے اور میں نے اس کیفیت کو شکست دینے کا فیصلہ کیا ہے‘‘۔ اس تحریر پر گنٹر زاکس کے دستخط بھی موجود ہیں۔ ساتھ یہ بھی لکھا ہے کہ مرض’ A ‘ کا کوئی علاج نہیں ہے اور نہ ہی انہیں اب کسی قسم کی کوئی امید ہے۔ انہوں نے اس تحریر میں ’ A ‘ کی وضاحت نہیں کی۔

60 ء کی دہائی میں وہ صرف ایک پلے بوائے کی وجہ سے ہی شہرت نہیں رکھتے تھے بلکہ وہ ایک معروف فوٹوگرافر بھی تھے۔ ساتھ ہی فرانس کے علاقے Saint Tropez کو امیر لوگوں اور خوبصورت چہروں کے لیے مخصوص کرنے میں بھی ان ہی کا ہاتھ ہے۔

Der Fotograf Gunter Sachs posiert in seinem Fotostudio in München mit einer Kamera

گنٹر زاکس بطور فوٹو گرافر بھی بہت شہرت رکھتے تھے

آج بھی دنیا بھر سے فلمی ستارے اور شو بزنس کی معروف شخصیات چھٹیاں منانے کے لیے اس تفریحی مقام کا رخ کرتی ہیں۔ ساتھ ہی وہ مصوری کے شوقین بھی تھے۔ اس کے علاوہ ان کی وجہ شہرت ان کی سابقہ بیوی بریگیٹےبارڈوٹ بھی تھیں۔ بارڈوٹ فرانس کی مشہور اداکارہ، ماڈل اور گلوکارہ رہی ہیں۔

گنٹر زاکس جرمنی کے جنوبی حصے میں پیدا ہوئےتھے اور 1976ء میں انہوں نے سوئس شہریت لے لی تھی۔ ان کے قریبی حلقوں کا کہنا ہے کہ وہ ایک انسان دوست تھے۔ گنٹر زاکس کے بارے میں یہ بھی کہا جاتا ہے کہ انہیں یہ معلوم تھا کہ خوش کس طرح رہا جاتا ہے۔ زاکس کے تین بیٹے ہیں۔ ان کے والد نے بھی خود کشی کی تھی۔

رپورٹ: عدنان اسحاق

ادارت: شامل شمس

ویب لنکس