1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

مسلم دنیا فلسطین کے معاملے پر متحد ہو جائے، انڈونیشیا

انڈونیشیا کے صدر نے مسلم ممالک کے سربراہی اجلاس کے موقع پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ دنیا کے تمام اسلامی ممالک فلسطین کے معاملے پر متحد ہو جائیں۔ انہوں نے کہا کہ اسرائیل ’یک طرفہ اور غیرقانونی پالیسیاں‘ جاری رکھے ہوئے ہے۔

آبادی کے لحاظ سے دنیا کے سب سے بڑے مسلم ملک انڈونیشیا کے صدر یوکو ودودو کا کہنا تھا کہ فلسطین کی بگڑتی ہوئی صورتحال سے متعلق پوری دنیا فکرمند ہے۔ ان کا اسرائیل پر تنقید کرتے ہوئے کہنا تھا کہ وہ ’یک طرفہ اور غیرقانونی‘ پالیسیاں جاری رکھے ہوئے ہے۔

ستاون رکنی اسلامی تعاون کی تنظیم کا ایک خصوصی اجلاس انڈونیشیا کے دارالحکومت جکارتہ میں ہو رہا ہے۔ اس اجلاس میں خصوصی طور پر یروشلم اور فلسطین کے معاملے پر توجہ مرکوز کی جائے گی۔ اس کانفرنس میں مشرق وسطیٰ کے چہار فریقی گروپ کے نمائندے بھی شرکت کر رہے ہیں۔ اس گروپ میں اقوام متحدہ، روس، امریکا اور یورپی یونین کے نمائندے شامل ہیں۔ ان کے علاوہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے بھی اس خصوصی اجلاس میں شرکت کے لیے اپنے نمائندے بھیجے ہیں۔

Indonesien OIC Gipfel - Präsidenten Joko Widodo & Mamnoon Hussain, Pakistan

انڈونیشیا کے صدر اپنے پاکستانی ہم منصب سے ملاقات کرتے ہوئے

انڈونیشیا کے صدر کا افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا، ’’ او آئی سی کو مسئلے کے حل کا حصہ ہونا چاہیے نہ کہ وہ خود مسئلے کا حصہ بنے۔‘‘ اسرائیل کے مطابق حالیہ تشدد میں اضافے کہ وجہ فلطسطینیوں کی طرف سے ’’جھوٹ اور تشدد پر اکسائے جانے‘‘ کی مہم ہے۔ دوسری جانب فلسطینیوں کا کہنا ہے کہ وہ نصف صدی سے اسرائیلی فوجی حکمرانی سے تنگ آ چکے ہیں اور مایوس ہیں۔

گزشتہ کئی دہائیوں سے بین الاقوامی برادری اسرائیل فلسطین تنازعے کا کو ئی جامع حل تلاش کرنے میں ناکام رہی ہے۔ نہ تو یروشلم، نہ ہی سرحدوں، نہ ہی سکیورٹی انتظامات اور نہ ہی فلسطینی مہاجرین کی قسمت کا مسئلہ حل ہو پایا ہے۔

انڈونیشیا کے صدر کا مطالبہ کرتے ہوئے کہنا تھا، ’’بین لاقوامی برادری کا حصہ ہونے کی طور پر اسرائیل کو مقبوضہ فلسطینی علاقوں میں فوری طور غیرقانونی سرگرمیاں ختم کر دینی چاہیں۔‘‘ فلسطین اور اسرائیل کے مابین امن مذاکرات کا سلسلہ تین برس پہلے منقطع ہو گیا تھا۔ فلسطینیوں کا مطالبہ ہے کہ مذاکرات شروع ہونے سے پہلے اسرائیل کو مقبوضہ علاقوں میں غیرقانونی تعمیرات کا سلسلہ بند کرنا ہو گا۔

Indonesien OIC Gipfel - Adel al-Jubeir & Mahmud Abbas in Jakarta

فلسطینی صدر محمود عباس اور سعودی وزیر خارجہ

انڈونیشیا کے صدر کا مزید کہنا تھا، ’’انڈونیشیا اور اسلامی دنیا ایسے ٹھوس اقدامات کے لیے تیار ہیں، جن سے اسرائیل کو مجبور کیا جا سکے کہ وہ فلسطین کو اپنی کالونی بنانے سے گریز کرے۔‘‘ فلسطینی یروشلم کو اپنی مستقبل کی ریاست کا دارالحکومت بنانا چاہتے ہیں۔