1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

فن و ثقافت

مسلمان اداکار کی شرکت، ہندو انتہا پسندوں نے ڈر امہ روک دیا

بھارت کے ایک گاؤں میں روایتی ہندو مت کے ڈرامے میں مسلمان اداکار کی شرکت نے تنازعہ پیدا کر دیا۔ اِس ڈرامے میں مسلمان اداکار کی شرکت کے خلاف ہندو انتہا پسند دیوار بن کر کھڑے ہو گئے۔

Nawazuddin Siddiqui (DW/M. Gopalakrishnan)

اداکار نوازالدین صدیقی

بھارتی ریاست اترپردیش میں ہندو مت کا ایک روایتی ڈرامہ ’رام لیلا‘ اسٹیج پر پیش کیا جانے والا تھا کہ ہندو انتہا پسندوں کے جتھے نے  اِسے روک دیا۔ ڈرامے میں بھارتی فلم انڈسٹری المعروف بالی ووڈ کے معروف اداکار نواز الدین صدیقی کی پرفارمنس بھی شامل تھی۔ بھارت بھر میں نواز الدین صدیقی اپنی فلم ’لنچ بکس‘ کی وجہ سے انتہائی زیادہ شہرت رکھتے ہیں۔

بھارت کی مقدس کتاب رامائن کے واقعات پر مبنی ڈرامہ نواز الدین صدیقی کے آبائی گاؤں بڈانا میں اسٹیج پر پیش کیا جانے والا تھا۔ شائقین ڈرامے کے منتظر تھے کہ منتظمین نے اِسے منسوخ کرنے کا اعلان کیا۔ منتظمین کو انتہائی دائیں بازو کے مذہبی قوم پرست گروپ شیو سینا کے مخالفت کا سامنا کرنا پڑا۔ اس تنظیم کے اراکین بڈانا گاؤں پہنچے اور رامائن کے کرداروں پر مبنی ڈرامے ’رام لیلا‘ میں نواز الدین صدیقی کی شرکت کو مذہبی اقدار کے منافی قرار دے دیا۔

Szene aus dem Film Peepli Live (Aamir Khan Productions)

نواز الدین صدیقی ایک فلم کے منظر میں

گاؤں کی رام لیلا کمیٹی کے صدر دامودر پرشاد شرما نے معتبر بھارتی اخبار انڈین ایکسپریس کو حالات و واقعات سے آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ شیو سینا کے چند ممبران نے ڈرامہ شروع ہونے سے کچھ دیر قبل اعتراض کیا کہ رام لیلا میں ایک مسلمان اداکار کوئی کردار کس بنیاد پر ادا کر سکتا ہے۔ شرما کے مطابق بعد میں پولیس نے انہیں ڈرامے میں نواز الدین صدیقی کی پرفارمنس ختم کرنے کی ہدایت کی۔

شرما نے یہ بھی بتایا کہ پولیس نے کمیٹی پر واضح کیا کہ اگر ڈرامے میں مسلمان اداکار کے شامل کرنے کے بعد مجموعی صورت حال خراب ہوتی ہے تو اِس کے ذمہ دار کمیٹی کے اراکین ہوں گے۔ شرما کے مطابق ڈرامہ دیکھنے کے لیے شائقین کی ایک بڑی تعداد موجود تھی اور گڑبڑ کی صورت میں امن عامہ کو شدید خطرات لاحق ہو سکتے تھے۔

ایک اور اخبار دی ٹائمز آف انڈیا کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے شیوسینا کے مقامی  اہلکار مکیش شرما کا کہنا تھا کہ بڈانا مبں رام لیلا کی پچاس سالہ تاریخ میں کبھی کوئی مسلمان اداکار اسٹیج پر نمودار نہیں ہوا تو اب ایسا کرنے کی کسی صورت میں اجازت نہیں دی جا سکتی۔

 ڈرامے کا انعقاد منسوخ کرنے پر صدیقی نے شدید مایوسی کا اظہار کیا۔ انہوں نے اپنے ٹوئٹ میں کہا کہ رام لیلا میں اداکاری کرنا اُن کا بچپن کا ایک خواب ہے اور امکاناً وہ اگلے برس اِس خواب کی تکمیل کر پائیں گے۔