1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

مستحکم افغانستان کے لئے پاکستانی کردار ناگزیر، گیلانی

پاکستانی وزیراعظم یوسف رضا گیلانی نے کہا ہے کہ افغانستان میں پائیدار قیام امن کے لئے پاکستان کا کردار ناگزیر ہے۔

default

پاکستانی وزیراعظم یوسف رضا گیلانی

منگل کو مردان میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پاکستان کے بغیر، افغانستان میں امن کے لئے کسی سمھجوتے پر پہنچنا ناممکن ہے۔

وزیراعظم یوسف رضا گیلانی نے یہ بیان مردان میں سیلاب سے متاثرہ علاقوں کے ایک دورے کے دوران دیا۔ یوسف رضا گیلانی نے افغانستان میں قیام امن کے بارے میں کی جانے والی کوششوں پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا،’ ہم مسئلے کا حصہ نہیں بلکہ اس کا حل ہیں۔‘

افغان صدرحامد کرزئی نے کچھ دن قبل ہی یہ اعتراف کیا تھا کہ وہ طالبان کے ساتھ غیر سرکاری سطح پر مذکرات جاری رکھے ہوئے ہیں۔ اسی حوالے سے وزیراعظم یوسف رضا گیلانی سے پوچھا گیا کہ کیا کرزئی نے پاکستانی حکام سے اس بارے میں کوئی مشاورت کی ہے تو گیلانی نے کہا، ’جب صدر کرزئی اپنی حکمت عملی سے امریکہ کو آگاہ کریں گے تو اسی وقت وہ ہمیں بھی اس بارے میں مطلع کریں گے اور تب ہم اس پر کچھ تبصرہ کر سکیں گے‘۔

اگرچہ پاکستان نے افغانستان میں استحکام کی خاطر پہلے بھی کئی مرتبہ اپنی خدمات سر انجام دینے کے لئے بیانات دئے ہیں تاہم افغان حکام وہاں قیام امن کے لئے پاکستان کے کردار کے بارے میں شکوک رکھتے ہیں۔

Hamid Karzai

افغان صدر حامد کرزئی بھی کہہ چکے ہیں کہ پاکستان میں پناہ لئے ہوئے شر پسند عناصر افغانستان کے استحکام کے لئے خطرہ ہیں

یہ بھی کہا جاتا ہے کہ سن1990ء میں افغانستان میں طالبان نے کنٹرول حاصل کرنے کے لئے پاکستانی خفیہ ادارے آئی ایس آئی کی خدمات بھی حاصل کی تھیں۔ مبصرین کے مطابق علاقائی سطح پر بالخصوص بھارت کے مقابلے میں اپنا اثر و رسوخ بڑھانے کے لئے پاکستان، افغانستان میں خصوصی دلچسپی رکھتا ہے۔ امریکی اور افغان حکام کئی بار کھلم کھلا کہہ چکے ہیں کہ افغانستان کے کئی اہم طالبان کمانڈر پاکستانی قبائلی علاقوں میں روپوش ہیں تاکہ وہ وہاں نیٹو افواج کی کارروائیوں سے بچ سکیں۔

افغان حکام کے مطابق پاکستان اُن کے اندرونی معاملات میں دخل اندازی کرتا ہے۔ امریکی حکام بھی بارہا کہہ چکے ہیں کہ پاکستانی خفیہ ایجنسی آئی ایس آئی میں کچھ عناصر افغان طالبان کے ساتھ ہمدردی رکھتے ہیں۔

رپورٹ: عاطف بلوچ

ادارت: امجد علی

DW.COM