1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

مختلف معاملات پرٹرمپ کو وضاحت کرنی چاہیے، یُنکر

یورپی کمیشن کے سربراہ ژاں کلوڈ یُنکر نے کہا ہے کہ امریکا کے نو منتخب صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی طرف سے تجارت، نیٹو سے تعلقات اور ماحولیاتی تبدیلیوں کے حوالے سے معاملات واضح کرنے کی ضرورت ہے۔

خبر رساں ادارے روئٹرز کے مطابق آج جمعرات 10 نومبر کو جرمن دارالحکومت برلن میں ایک تجارتی ایونٹ کے دوران یُنکر کا کہنا تھا، ’’ہم جاننا چاہیں گے کہ عالمی تجارتی پالیسی کے حوالے سے چیزیں کیسے آگے بڑھیں گی۔‘‘ یُنکر کا مزید کہنا تھا، ’’ہم یہ بھی جاننا چاہیں گے کہ وہ (ٹرمپ) نیٹو اتحاد سے متعلق کیا ارادہ رکھتے ہیں۔ ہمیں یہ بھی معلوم ہونا چاہیے کہ وہ ماحولیات کے حوالے سے کیا پالیسیاں اپنانا چاہتے ہیں۔ یہ سب چیزیں آئندہ چند ماہ میں واضح ہونی چاہییں۔‘‘

اس موقع پر یُنکر کا یہ بھی کہنا تھا کہ امریکا اور یورپی یونین کے درمیان جس تجارتی معاہدے پر ان دنوں بات چیت ہو رہی ہے اُس کے آئندہ دو برس کے دوران طے ہونے کی انہیں توقع نہیں ہے: ’’امریکا کے ساتھ تجارتی معاہدہ، میں نہیں سمجھتا کہ یہ آئندہ دو برسوں تک پایہ تکمیل کو پہنچے گا۔‘‘

US-Präsidentschaftswahl 2016 - Sieg Donald Trump (Reuters/M. Segar)

ہم یہ بھی جاننا چاہیں گے کہ ٹرمپ نیٹو اتحاد سے متعلق کیا ارادہ رکھتے ہیں، یُنکر

گزشتہ روز برلن ہی میں یورپی پالیسیوں کے موضوع پر تقریر کرتے ہوئے یورپی کمیشن کے سربرہ ژاں کلوڈ یُنکر نے سلامتی کے شعبے میں یورپی سطح پر قریبی تعاون بڑھانے پر زور دیا۔ انہوں نے کہا کہ یورپی یونین کو امریکی صدارتی انتخابات کے نتائج سے قطع نظر یورپ کے دفاع کو منظم کرنا ہو گا۔

اس تقریب کے دوران انہوں نے خبردار کیا کہ امریکی ہر وقت یورپی سلامتی پر توجہ نہیں دے سکتے۔ ان کے بقول اسی وجہ سے یورپ کو دفاع کے شعبے میں ایک نئی شروعات اور یورپ کی مشترکہ فوج بنانے کے اپنے ہدف پر کام کرنے کی ضرورت ہے۔ ژاں کلوڈ یُنکر کے مطابق بین الابراعظمی روابط پہلے کی طرح قائم  رہیں گے۔