1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

مجھے صوبہ سر حد کاوزیر اعلی بنائے جانے کا فیصلہ متفقہ ہے : حیدر خان ہوتی

عوامی نیشنل پارٹی کی پارلیمانی کمیٹی نے امیر حیدر خان ہوتی کو صوبہ سرحد کے وزیر اعلی کے عہدے کے لئے نامزد کر دیا ہے جبکہ بشیر احمد بلور صوبائی پارلیمانی راہنما ہوں گے ۔

صوبہ سرحد کے نامزد وزیر اعلی امیر حیدر خان ہوتی نے ڈویچے ویلے کو خصوصی انٹر ویو دیتے ہوئے کہا ہے کہ صوبے میں امن و امان کا قیام اور دہشت گردی کا خاتمہ ہماری اولین ترجیح ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ اس کے علاوہ صوبائی خود مختاری ، اقتصادی ترقی ، تعلیم اور صحت جیسے مسائل پر بھی خصوصی توجہ دی جائے گی۔

امیر خان ہوتی نے اپنے انٹرویو میں کہا کہ اگرچہ پاکستان کے قبایلی علاقہ جات میں سیاسی عمل کی کافی گنجائش ہے لیکن سابقہ حکومت کی غلط حکمت عملی کے نتیجے میں حالات مزید خراب ہوئے ہیں ۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ اگر دوبارہ موجودہ سیاسی اتحاد میں ایکدوسرے کو اعتماد میں نہ لیا گیا اور ماضی کی غلطیاں دہرائی گئیں تو یہ نہ صرف صوبہ سرحد بلکہ پاکستان کے لئے بھی نقصان دہ ہو گا۔

عدلیہ کی بحالی پر پوچھے گئے سوال پر امیر حیدر خان ہوتی نے کہا کہ ہمیں معزول عدلیہ کی بحالی پر زیادہ توجہ دینے سے زیادہ اس ادارے کو مضبوط بنانے کی کوشش کرنی چاہیے ۔ تاہم انہوں نے کہا کہ اس بارے میں ایک خصوصی کمیٹی تشکیل دے دی گئی ہے جو جلد ہی پارلیمانی طریقہ کار کے مطابق اپنے تحفظات پیش کرے گی۔

انہوں نے کہا کہ انہیں فخر ہے کہ وہ ایک معتبر سیاسی گھرانے سے تعلق رکھتے ہیں لیکن ان کی نامزدگی میںان کے گھرانے کا کوئی عمل دخل نہیں بلکہ عوامی نیشنل پارٹی کی پارلیمانی کمیٹی نے متفقہ طور پر یہ فیصلہ کیا ہے ۔

Audios and videos on the topic