1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

فن و ثقافت

متاثرین سیلاب کی امداد کے لئے محفل موسیقی

کراچی میں جرمن قونصل خانے کی جانب سے پاکستانی سیلاب زدگان کی امداد کے لئے منعقدہ محفل موسیقی میں جرمن موسیقار نے سماں باندھ دیا۔

default

پاکستان کی تاریخ کے بدترین سیلاب سے متاثرہ افراد کی امداد کے لیے دنیا بھر میں سرگرمیاں اب بھی جاری ہیں۔۔ اسی حوالے سے کراچی میں قائم جرمن قونصل خانے کی جانب سے سیلاب زدگان کی امداد کے لیے رقم اکھٹی کرنے کے لئے موسیقی کی ایک محفل کا اہتمام کیا گیا تھا۔ اس کنسرٹ میں شرکت کے لیے عالمی شہرت یافتہ جرمن موسیقار اندریاس کیرن کو خصوصی طور پر مدعو کیا گیا تھا۔

جیسے ہی اندریاس کیرن کی انگلیاں پیانو پر پڑنا شروع ہوئیں تو ہر طرف خاموشی چھاگئی اور کنسرٹ میں موجود ہر فرد پیانو کی دھنوں میں محو ہوگیا۔ انہوں س نے سیلاب زدگان کی مدد کے لیے کنسرٹ میں شرکت کے لیے موصول ہونے والی دعوت کو اپنے لئے اعزاز قرار دیا ہے۔

NO FLASH Pakistan Hochwasser Flut Hungersnot

متاثرین سیلاب کو خوراک کے لئے جگہ جگہ ہاتھ پھیلانا پڑ رہا ہے

''جب مجھے کنسرٹ کا دعوت نامہ ملا تو میں بہت اکسائٹڈ تھا، دور سے پیسے دے کر امداد کرنا بہت آسان ہے لیکن میں خود سیلاب زدگان کے لیے کچھ کرنا چاھتا تھا، دور سے ٹی وی پر دیکھ کر درست صورت حال کا اندازہ نہیں ہوتا، خود تجربہ کرنا ضرورری ہے، پاکستان بہت اچھا ملک ہے، خوبصورت موسم، اچھے لوگ ، مجھے یہاں آکر بہت اچھا محسوس ہوا‘‘۔
کنسرٹ میں پاکستان کے معروف گٹارسٹ عامر ذکی نے بھی اپنے فن کا مظاہرہ کیا۔ ان کی پرفارمنس سے کنسرٹ میں شریک افراد خوب محظوظ ہوئے۔

جب اندریاس اور عامر ذکی نے ایک ساتھ موسیقی کی دھنیں چھیڑی تو یوں محسوس ہوا کہ مغربی اور مشرقی موسیقی میں گویا کوئی فرق ہی باقی نہیں رہا۔ یہی وجہ تھی کہ کنسرٹ میں شریک لوگوں نے دونوں فنکاروں کو دل کھول کر داد دی۔


Flash-Galerie DRK

جرمن ہلال احمر کے سربراہ رڈولف سائیٹیرز

اس موقع پر عامر ذکی کا کہنا تھا کہ انہیں ایک نیک مقصد کے لیے کنسرٹ میں شرکت کی دعوت دی گئی تھی اور انہیں امید ہے کہ انہوں نے اپنا کام پوری ایمانداری سے انجام دیا۔ ’’میں نے بہت مرتبہ ہزاروں لوگوں کے سامنے پرفارم کیا ہے لیکن آج سیلاب زدگان کے لیے پرفارم کرکے کچھ الگ ہی احساسات ہیں، مجھے یہاں لوگوں کو انٹرٹین کرنے کے لیے بلایا گیا تھا تاکہ جو لوگ کنسرٹ میں شریک ہیں وہ دل کھول کر سیلاب زدگان کی امداد کریں اور مجھے امید ہے کہ میں نے اپنا کام پوری ایمانداری سے سرانجام دیا۔‘‘


تقریب کے حوالے سے بات کرتے ہوئے کراچی میں تعینات جرمن قونصل جنرل ڈیٹر فرئینٹ نے بتایا کہ سیلاب اپنے ساتھ لاکھوں لوگوں کی زندگی بھر کی جمع پونجی بہاکر لے گیا ہے اور ہمیں ہر طرح سے انکی مدد کرنی ہے لہذا اسی جذبے کو پیشِ نظر رکھتے ہوئے جرمن قونصل خانے کی جانب سے اس کنسرٹ کا انعقاد کیا گیا ہے۔‘‘سیلاب زدگان بہت برے حالات میں ہیں، سب انکی مدد کے لیے کچھ نہ کچھ کررہے ہیں، ہم نے سوچا کہ کنسرٹ کے ذریعے متاثرین کی امداد کے لیے رقم اکھٹی کی جائے۔

رپورٹ رفعت سعید /کراچی

ادارت شادی خان سیف





DW.COM