1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

ماہی گیری کی کشتی پر قبضہ: چین کی جاپان کو تنبیہ

جاپان کا چین کے ساتھ ایک دیرینہ علاقائی تنازعہ پایا جاتا ہے اور ٹوکیو نے چین کی ایک کشتی چند روز سے اپنے قبضے میں لے رکھی ہے۔ اس پر آج بیجنگ نے ٹوکیو کو تنبیہ کی کہ وہ کسی بھی طرح کے غلط اندازے لگانے سے اجتناب کرے۔

default

بیجنگ اور ٹوکیو کے مابین باہمی تعلقات نئی کشیدگی کا شکار

چین اور جاپان ایشیا کی دو سب سے بڑی معیشتیں ہیں اور تازہ ترین تنازعے میں چین کے اعلیٰ ترین سفارت کار کی طرف سے دئے جانے والے ایک بیان نے دونوں ملکوں کے درمیان نئی کشیدگی میں اور بھی اضافہ کر دیا ہے۔ یوں چین اور جاپان کے مابین ان کوششوں کو بھی نقصان پہنچا ہے، جو کئی عشروں سے جاری دوطرفہ بداعتمادی میں کمی کے لئے اب تک کی گئی تھیں۔

چین کی سرکاری خبر ایجنسی کے مطابق دونوں ملکوں کے مابین متنازعہ سمندری علاقے میں گزشتہ ہفتے چینی ماہی گیروں کی ایک کشتی جاپانی کوسٹ گارڈز کے دو بحری جہازوں سے ٹکرا گئی تھی۔ اس پر جاپانی حکام نے اس کشتی کو اپنے قبضے میں لے کر اس کے کپتان اور عملے کو اپنی حراست میں لے لیا تھا۔ یوں بیجنگ اور ٹوکیو کے مابین کافی عرصے بعد باہمی تعلقات ایک نئی کشیدگی اور کچھاؤ کا شکار ہو گئے تھے۔

Japanische Kriegsschiffe verlassen ihren Flottenstützpunkt

چینی کشتی اور اس کے عملے کو فوری طور پر رہا کر دینا چاہئے

اتوار کو علی الصبح چین کے سٹیٹ کونسلر دائی بِنگ گُواَو (Dai Bingguo) نے بیجنگ میں جاپانی سفیر اُوئی چِیرو نِیوا (Uichiro Niwa) کو طلب کرکے ان پر واضح کر دیا کہ چین کو اس واقعے پرگہری تشویش ہے ۔ اس چینی سفارت کار نے جاپانی سفیر سے کہا کہ ٹوکیو کو ان حالات کے بارے میں کوئی غلط اندازے نہیں لگانے چاہیئں، جو چینی ماہی گیروں کی کشتی اور اس کے عملے کے حراست میں لئے جانے کا سبب بنے۔

دائی بِنگ گُواَو نے کہا کہ جاپان کو اس معاملے میں سیاسی طور پر ایک عقلمندانہ فیصلہ کرتے ہوئے چینی کشتی اور اس کے عملے کے تمام ارکان کو فوری طور پر رہا کر دینا چاہئے۔چین کی طرف سے اس کے اس سرکردہ ترین سفارت کار نے ہی جاپانی سفیر کو یہ پیغام کیوں دیا، اس کی وجہ یہ ہے کہ دائی بِنگ گُواَونہ صرف خارجہ پالیسی کے حوالے سے چینی حکومتی اور ریاستی رہنماؤں کی مشاورت کا کام کرتے ہیں بلکہ وہ سٹیٹ کونسل کہلانے والی حکومتی کابینہ کے رکن بھی ہیں۔ اس حوالے سے چینی کمیونسٹ پارٹی میں دائی کی حیثیت ملکی وزیر خارجہ سے بھی زیادہ ہے۔

China US Gespräche

دائی بِنگ گُواَو ہیلری کلنٹن کے ساتھ فائل فوٹو

کشیدگی کے شکار چینی جاپانی تعلقات میں آج اتوار کو بیجنگ نے اپنے اس شدید رد عمل کا اظہار اس لئے بھی کیا کہ گزشتہ جمعہ کے روز ایک جاپانی عدالت نے چینی کشتی کے کپتان اور اس کے ماتحت چودہ رکنی عملے کو مزید دس دن کے لئے حراست میں رکھنے کا حکم دے دیا تھا۔

ماہرین کو ایشیا کی ان دونوں بڑی اقتصادی طاقتوں کے مابین کشیدگی پر اس لئے بھی تشویش ہے کہ دیرینہ سیاسی بداعتمادی کے باوجود، بیجنگ اور ٹوکیو کے تجارتی اور سرمایہ کاری روابط بڑی تیزی سے مزید بہتر ہو رہے ہیں۔

سال رواں کی پہلی ششماہی میں دونوں کے درمیان باہمی تجارت کا حجم قریب 13 ٹریلین ین یا 98 بلین برطانوی پاؤنڈ کے قریب رہا تھا ۔ یہ مالیت 2009 کی پہلی ششماہی کے مقابلے میں 35 فیصد زیادہ ہے۔

رپورٹ : عصمت جبیں

ادارت : عاطف توقیر

DW.COM

ویب لنکس