1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

مالیاتی بل منظور: سپریم کورٹ کے ججوں کی تعداد سولہ سے انتیس کر دی گئی

مالیاتی بل کی منظوری میں مسلم لیگ نواز گروپ نے بھی ایک اہم کردار ادا کیاجو کہ اب تک سپریم کورٹ کے ججوں کی تعداد میں اضافے کے خلاف رہی ہے۔

default

پاکستانی وکلاء اور سول سوسائٹی ججوں کی تعداد میں اضافے کو مسترد کر چکی ہے

پاکستان کی قومی اسمبلی نے سن دوہزار آٹھ دو ہزار نو کے لیےمالیاتی بل منظور کر لیا ہے۔ یوں تو بجٹ کا منظور کیا جانا کوئی غیر معمولی بات نہیں ہے مگر مزکورہ مالیاتی بل کے زریعے حکومت نے سپریم کورٹ کے ججوں کی تعداد میں اضافہ کر کے اسے سولہ سے انتیس کر دیا ہے۔ پاکستان میں بحالیِ عدلیہ کے لیے وکلاء کی تحریک جاری ہے اور وکلاء برادری ججوںکی تعداد میں اضافے کو پہلے ہی مسترد کر چکی ہے۔

Pakistan Ehemaliger Premierminister Nawaz Sharif

کیا مسلم لیگ نواز گروپ بحالیِ عدلیہ پر اپنے دیرینہ موقف سے دست بردار ہو رہی ہے؟

اسلام آباد میں ڈائچے ویلے کے نمائندے شکور رحیم کا کہنا ہے کہ مزکورہ بل کے منظور کیے جانے سے مسلم لیگ نواز کی وکلاء تحریک کے ساتھ یک جہتی اب شکوک و شبہات کا شکار ہو گئی ہے۔