1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

مہاجرین کا بحران

مالٹا سمٹ پر لیبیا کے مہاجرین اور ٹرمپ کا سایہ

یورپی یونین کا سربراہ اجلاس جمعہ تین فروری کو مالٹا کے دارالحکومت میں شروع ہو گا۔ اس اجلاس میں ٹرمپ کی سات مسلمان ملکوں پر پابندی اور لیبیا سے مہاجرین کے بہاؤ کو روکنے کے موضوعات اہمیت اختیار کیے ہوئے ہیں۔

سفارتی مبصرین کے مطابق یورپی یونین کی مالٹا سمٹ پر لیبیا سے مہاجرین کے بہاؤ کو روکنے اور امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے سات مسلمان ملکوں کے شہریوں کی امریکا آمد پر پابندی کے فیصلے سے کئی قسم کے اندیشے اور وسوسے منڈلاتے دکھائی دیتے ہیں۔ سربراہ اجلاس کے ایجنڈے پر برطانوی حکومت کا یورپی یونین کو خیرباد کہنے کا عمل بھی اہمیت اختیار کیے ہوئے ہے۔

لیبیا سے مہاجرین کے بہاؤ کو روکنے پر یورپی یونین نے خصوصی توجہ مرکوز کر رکھی ہے۔ لیبیا کے ایک سو کوسٹ گارڈز کو مہاجرین کی کشتیوں کو روکنے اور واپس لے جانے کے لیے خصوصی تربیتی پروگرام یونانی جزیرے کریٹ پر جاری ہے۔ ایک گروپ کی تربیت رواں مہینے میں مکمل ہو جائے گی۔ اس تربیتی پروگرام کے علاوہ بحیرہٴ روم میں مہاجرین کی کشتیوں کو قابو کرنے کا بحری مشن ’صوفیہ‘ بھی جاری ہے۔

Malta EU-Afrika-Gipfel in Valletta (Getty Images/B. Pruchnie)

یورپی یونین کونسل کے صدر ڈونلں ٹُسک مالٹا کے دورے پر

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے سات مسلمان ملکوں کے لیے ویزوں کا اجراء روکنے کے ساتھ ساتھ ویزے کے حامل شہریوں پر امریکا کا سفر کرنے کی پابندی سے بھی جو عالمی ہلچل پیدا ہوئی ہے، اُس کے اثرات یورپ میں بھی دیکھے جا رہے ہیں۔ یورپی یونین کے صدر ڈونلڈ ٹُسک نے اس مناسبت سے کہا ہے کہ گزشتہ ساٹھ سالہ تاریخ میں یورپ کے لیے بڑے خطرات میں روس، چین، اسلامی انتہا پسندی اور داخلی عوامیت پسندی کے ساتھ ساتھ اب ٹرمپ بھی ایک بڑے خطرے کے طور پر سامنے آئے ہیں۔

یورپی سیاستدان اور سابق پولستانی وزیراعظم ڈونلڈ ٹُسک کا مزید کہنا ہے کہ سات مسلمان ملکوں پر عائد کی جانے والی متنازعہ پابندی کے علاوہ بریگزٹ یا یورپی یونین میں ٹوٹ پھوٹ کی حمایت اور مغربی دفاعی اتحاد نیٹو کو غیر اہم تصور کرنے سے ٹرمپ نے در حقیقت یورپ کے لیے خطرے کی گھنٹیاں بجا دی ہیں۔ ٹُسک کے مطابق نئی امریکی انتظامیہ کے فیصلوں سے یورپ کو ایک غیریقینی مستقبل کا سامنا ہے۔

ان خیالات کا اظہار ٹُسک نے یورپی یونین کی سمٹ شروع ہونے سے قبل یورپی لیڈروں کے نام لکھے گئے اپنے ایک خط میں کیا ہے۔ مالٹا سمٹ کا خاص موضوع ’یورپی یونین کا مستقبل‘ تجویز کیا جا چکا ہے۔ مالٹا میں یونین کے ستائیس رکن ملکوں کے رہنما شریک ہوں گے۔ اس سمٹ میں برطانیہ کی وزیراعظم ٹریزا مے شرکت نہیں کریں گی۔

ملتے جلتے مندرجات