1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

ماسکو میں پوٹن اور روحانی کی ملاقات، تعاون پر اتفاق

روسی دارالحکومت ماسکو میں ایرانی صدر حسن روحانی کی اپنے روسی ہم منصب ولادیمیر پوٹن کے ساتھ ملاقات میں کئی شعبوں میں تعاون پر اتفاق ہوا ہے۔

Russland Treffen Hassan Rohani mit Putin in Moskau (Reuters/S. Karpukhin)

روسی صدر ولادیمیر پوٹن ماسکو میں مہمان ایرانی صدر حسن روحانی سے ملاقات کرتے ہوئے

مختلف نیوز ایجنسیوں نے متفقہ طور پر بتایا ہے کہ دونوں صدور کی اس ملاقات میں نہ صرف توانائی کے شعبے میں اشتراکِ عمل کو مزید فروغ دینے پر اتفاق کیا گیا بلکہ یہ بھی طے کیا گیا کہ شام اور افغانستان میں قیام امن کے لیے مشترکہ کوششیں بھی جاری رکھی جائیں گی۔

روسی صدر پوٹن نے ان مذاکرات کے بعد کہا کہ ایران اور روس ’بین الاقوامی دہشت گردی کے خلاف جنگ میں اپنے باہمی تعاون کو مزید مستحکم بنانے کا عمل‘ جاری رکھیں گے۔ حسن روحانی کا روس کا یہ پہلا سرکاری دورہ تھا۔ پیر ستائیس مارچ کو اس دورے کے آغاز پر روحانی نے امید ظاہر کی تھی کہ یہ دورہ دونوں ملکوں کے تعلقات میں ایک نیا موڑ ثابت ہو گا۔

واضح رہے کہ روس، ترکی اور ایران کی ثالثی کے نتیجے میں شام میں ہونے والی فائر بندی کے باعث وہاں جھڑپوں میں کمی لانے میں کامیابی ہوئی ہے۔ ان تینوں ملکوں کی مشترکہ کوششوں کی بدولت قازقستان کے دارالحکومت آستانہ میں شامی امن ماکرات کے دو دور ہوئے ہیں اور یہ ممالک ایک تیسرے راؤنڈ کے انعقاد کی تیاریوں میں بھی مصروف ہیں۔

شام میں خانہ جنگی گزشتہ چھ سال سے جاری ہے اور جہاں روس اور ایران مسلسل شامی صدر بشار الاسد کی حمایت جاری رکھے ہوئے ہیں، وہاں ترکی اسد کے مخالفین کے ساتھ تعاون کر رہا ہے۔

Russland Treffen Hassan Rohani mit Putin in Moskau (Reuters/S. Karpukhin)

حسن روحانی نے پیر ستاتیس مارچ کو روس کا دو روزہ دورہ شروع کیا تھا، جو اُن کا اس ملک کا پہلا سرکاری دورہ تھا

ایسوسی ایٹڈ پریس کے مطابق پوٹن نے کہا کہ روس افغان حکومت اور طالبان کے درمیان مکالمت کی حوصلہ افزائی کے لیے جاری کوششوں میں  ایران کی شمولیت کا بھی خیر مقدم کرتا ہے۔

روس کے دو روزہ دورے کے اختتام پر ایرانی صدر حسن روحانی کا کہنا تھا کہ تہران، روس اور ترکی قازقستان میں شام کے حوالے سے امن مذاکرات کا سلسلہ جاری رکھیں گے تاہم  اُنہوں نے یہ نہیں بتایا کہ آستانہ میں بات چیت کا تیسرا دور کب ہو گا۔ روحانی نے کہا کہ پوٹن کے ساتھ بات چیت میں اُنہوں نے شام کے ساتھ ساتھ یمن کی صورتِ حال پر بھی تبادلہٴ خیال کیا۔

ایرانی صدر کے اس دورے کے دوران توانائی اور اقتصادیات کے شعبوں میں کئی ایک سمجھوتوں پر دستخط بھی کیے گئے۔ ایران میں مئی میں اگلے صدارتی انتخابات ہونے والے ہیں، جن میں روحانی ایک بار پھر صدارت کے امیدوار ہوں گے۔ اس تناظر میں بھی وہ ایرانی معیشت کو مزید مستحکم بنانا چاہتے ہیں۔