1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

لیبیا پر نیٹو حملے، قذافی کی جوابی کارروائی کی دھمکی

لیبیا کے رہنما معمر قذافی نے دھمکی دی ہے کہ اگر مغربی دفاعی اتحاد نے لیبیا پر فضائی حملے بند نہ کیے تو یورپ کو جوابی حملوں کا نشانہ بنایا جائے گا۔

default

لیبیا پر معمر قذافی نے خبردار کیا کہ لیبیا میں حکومت کے حامی دستے یورپ پر ایسے حملے کریں گے جیسے ٹڈی دل اور شہد کی مکھیاں کرتی ہیں۔ طرابلس سے موصولہ رپورٹوں کے مطابق لیبیا کے دارالحکومت میں گرین اسکوائر میں جمع ہونے والے قذافی کے ہزاروں حامیوں کے ایک اجتماع میں معمر قذافی کی ایک تقریر لاؤڈ اسپیکروں پر سنائی گئی۔

اپنے اس خطاب میں قذافی نے کہا کہ لیبیا کے عوام یہ اہلیت رکھتے ہیں کہ ایک دن وہ اس جنگ کو یورپ اور بحیرہء روم کے علاقے تک لے جائیں گے۔ اس موقع پر قذافی نے کہا، ’’اگر نیٹو اتحاد لیبیا کے عوام کے گھروں، دفاتر اور بچوں کو نشانہ بنا سکتا ہے، اور انہیں اپنے طور پر جائز فوجی اہداف قرار دے سکتا ہے، تو لیبیا کے عوام اور فوجی دستے بھی یورپ کو شہد کی مکھیوں کی طرح نشانہ بنا سکتے ہیں۔‘‘

Reaktionen der Gaddafi-Unterstützer auf die Einrichtung der Flugverbotszone

معمر قذافی کے حامی نعرے لگاتے ہوئے

قذافی نے دعویٰ کیا کہ نیٹو کے لیے لیبیا کے بہادر عوام کو شکست دینا ممکن نہیں ہے، لہٰذا اس کے لیے اپنی کارروائیاں بند کر دینا ہی بہتر ہے۔

طرابلس کے گرین اسکوائر میں جمع قذافی کے ہزار ہا حامی اس موقع پر سبز پرچم اور معمر قذافی کی بڑی بڑی تصویریں اٹھائے ہوئے تھے۔ لاؤڈ اسپیکروں پر سنائی جانے والی قذافی کی تقریر کے دوران حاضرین بار بار’’ اللہ، قذافی اور لیبیا‘‘ کے نعرے بھی لگاتے رہے۔

دوسری جانب افریقی رہنماؤں نے لیبیا کی حکومت اور باغیوں کے درمیان بات چیت کرانے کی پیکش کی ہے تاکہ لیبیا میں جنگ کا خاتمہ کیا جا سکے۔ افریقی یونین کے رہنماؤں نے تاہم لیبیا کے رہنما معمر قذافی کے مستقبل کے حوالے سے کوئی واضح بیان دینے سے اجتناب کرتے ہوئے کہا ہے کہ قذافی کی بات چیت میں موجودگی ’لازمی‘ نہیں ہے۔

افریقی یونین نے بین الاقوامی فوجداری عدالت کی جانب سے قذافی کی گرفتاری کے لیے جاری کیے گئے وارنٹ کی مخالفت کرتے ہوئے اس پر عمل نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

رپورٹ: عصمت جبیں

ادارت : شامل شمس

DW.COM

ویب لنکس