1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

لیبیا: سرت پر قبضے کی جنگ جاری

لیبیا میں سابق حکمران معمر قذافی کے آبائی شہر سرت پر قبضے کے لیے حکومتی فورسز نے تازہ حملے کیے ہیں۔ دو روز سے جاری اس لڑائی میں کم از کم اٹھارہ افراد کے ہلاک اور تین سو کے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں۔

default

سرت کے علاوہ بن ولید پر بھی عبوری حکومت کی افواج کے حملے جاری ہیں۔ سرت اور بن ولید ان چند علاقوں میں ہیں جن پر اب تک قذافی کے حامی قابض ہیں۔ دارالحکومت طرابلس پر قذافی مخالفین کے قبضے کے بعد سے اب تک قذافی روپوش ہیں۔ ان کی تلاش جاری ہے۔

تازہ ترین اطلاعات کے مطابق حکومتی افواج نے قذافی کے حامیوں کو مزید پیچھے دھکیل دیا ہے۔ تاہم عبوری حکومت کے سربراہ مصطفیٰ عبدالجلیل کا کہنا ہے کہ سرت اور بن ولید کی فوجی کارروائیاں آسان نہیں ہیں۔

Flash-Galerie Vormarsch der Rebellen in Sirte

سرت کے علاوہ بن ولید پر بھی عبوری حکومت کی افواج کے حملے جاری ہیں

حکومتی فورسز کو ہفتے کے روز ایک اسٹریٹیجک کامیابی اس وقت حاصل ہوئی جب انہوں نے اس چوراہے کا کنٹرول حاصل کر لیا جو کہ قذافی کے حامیوں پر فیصلہ کن حملے کا راستہ ہے۔

دوسری جانب سرت میں ہزاروں کی تعداد میں شہریوں کے پھنسے ہونے کی اطلاعات ہیں۔ عبوری کونسل کے مطابق ان کی کوشش ہے کہ وہ شہریوں کو حفاظت کے ساتھ باہر نکال سکیں تاکہ وہ فائرنگ کا نشانہ بننے سے بچ سکیں۔

قبل ازیں نیٹو کے کمانڈروں نے امید ظاہر کی تھی کہ لیبیا کے سابق حکمران معمر قذافی کا آبائی شہر سرت جلد ہی عبوری کونسل کی حکومت کے قبضے میں آ جائے گا۔ نیٹو کمانڈروں کا یہ تجزیہ امریکی وزیر دفاع لیون پینیٹا کو پیش کیا گیا تھا۔

اس تجزیے میں یہ بھی کہا گیا کہ قذافی کا کنٹرول سرت پر تقریباً ختم ہو چکا ہے اور ان کی حامی افواج بھی تیزی سے ان کا ساتھ چھوڑ رہی ہیں۔ 

رپورٹ: شامل شمس⁄  خبر رساں ادارے

ادارت: امتیاز احمد

 

DW.COM