1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

لوڈ شیڈنگ کے خلاف احتجاج ، پاکستانی پنجاب میں کاروبار بند

آل پاکستان انجمن تاجران کی اپیل پر آبادی کے لحاظ سے پاکستان کے سب سے بڑے صوبے پنجاب میں لوڈ شیڈنگ کے خلاف ہڑتال کی جار ہی ہے۔ صوبے کے تمام بڑے شہروں میں تاجر تنظیموں نے منگل کے روز کاروبار بند رکھنے کا اعلان کیا ہے۔

default

Stadt Lahore in Pakistan, Elektrizitätskrise

پاکستان میں بجلی کی لوڈ شیڈنگ کے باعث جنریٹرز کی فروخت بڑھ جاتی ہے

لاہور سمیت کئی شہروں میں ایوان ہائے صنعت و تجارت کی طرف سے بھی اس ہڑتال کی حمایت کا اعلان کیا گیا ہے جبکہ کئی گڈز ٹرانسپورٹ کمپنیوں نے بھی پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف اور تاجروں کے ساتھ اظہار یکجہتی کرتے ہوئے پیر کو پیہہ جام ہڑتال کی کال دے دی ہے۔

پاکستان بھر میں بجلی کا بحران سنگین صورت اختیار کرچکا ہے۔ ملک کے کئی علاقوں میں عوامی احتجاج بڑھتا جا رہا ہے۔ پنجاب کے بڑے شہروں اور کراچی میں صورت حال کافی خراب ہو چکی ہے۔ فیصل آباد ، لاہوراور کراچی سمیت ملک کے درجنوں علاقوں میں پیر کو لوڈ شیڈنگ کے خلاف احتجاجی مظاہرے کئے گئے۔ لاہور میں ملتان روڈ، فیروز پور روڈ اور جی ٹی روڈ پر احتجاجی مظاہرین کے غیض و غضب کا نشانہ پولیس اور واپڈا کے اہلکار بھی بنتے رہے۔ ایک روز پہلے چئیرمین واپڈا کے گھر کے سامنے بھی احتجاجی مظاہرہ کیا گیاتھا۔

ڈوئچے ویلے سے گفتگو میں آل پاکستان انجمن تاجران کے صدر حاجی مقصود بٹ نے امید ظاہر کی ہے کہ منگل کو پنجاب بھر میں ہونے والی ہڑتال انتہائی کامیاب ہو گی۔ ان کے مطابق 16-16 گھنٹے تک جاری رہنے والی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کی وجہ سے تاجروں کا معاشی قتل عام ہو رہا ہے۔ فیکٹریاں بند ہو رہی ہیں اور لوگ فاقوں کا شکار ہو رہے ہیں۔

ان کے مطابق ملک کے مراعات یافتہ طبقوں کو لوڈ شیڈنگ سے مستثنیٰ رکھا جا رہا ہے جس کی وجہ سے انہیں لوڈ شیڈنگ کی تکلیفوں کا اندازہ نہیں ہے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ حکومت بار بار جھوٹے وعدے کر کے اپنا اعتماد کھو چکی ہے۔ اگر حکومت نے منگل کو ہونے والی تاجروں کی ہڑتال کے باوجود لوڈ شیڈنگ کے خاتمے کیلئے کوئی موثر اقدامات نہ کئے تو پھر ملک گیر ہڑتال کی کال دی جائے گی۔

انہوں نے اس تاثر کی تردید کی کہ تاجر نواز شریف کے سیاسی عزائم کی تکمیل کیلئے ہڑتالیں کر رہے ہیں۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت ہڑتال کرنے والوں کے کام میں رکاوٹیں ڈال رہی ہے اور نہ ہی ان کی حمایت کر رہی ہے۔

Pakistan Demonstration gegen Preissteigerungen in Lahore

ملک کے مختلف شہروں میں عوام بجلی کی بندش پر سراپا احتجاج رہتے ہیں

ادھر مقامی تاجر رہنما اور انجمن تاجران سینٹری وئیر لاہور کے نائب صدر میاں محمد سلیم نے ڈوئچے ویلے کو بتایا کہ لاہور کی تمام مارکیٹوں میں تاجروں کی ہڑتال کے سرکلر جاری کر دئے گئے ہیں ،ان کے مطابق پنجاب میں منگل کو تاجروں نے ریلیاں نکالنے ، احتجاجی کیمپ لگانے اور احتجاجی جلسے منعقد کرنے کا پروگرام بھی بنایا ہے۔

ادھر پاکستان الیکٹرک پاور کمپنی کے ایک سینئر اہلکار نے ڈوئچے ویلے کو بتایا کہ وفاقی وزیر پانی و بجلی کی ہدایت پر پیپکو کے ایک وفد نے تاجروں کے رہنمائوں سے ملاقات کر کے انہیں پیش کش کی ہے کہ وہ لوڈ منیجمنٹ کمیٹیوں میں تاجر رہنمائوں کی شمولیت کیلئے اپنے نمائندوں کے نام دیں تا کہ تاجروں کی مرضی کے مطابق لوڈ شیڈنگ کا پروگرام تشکیل دیا جا سکے لیکن اس پیش کش کے باوجود تاجروں نے ہڑتال کی کال واپس لینے سے انکار کر دیا ہے۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ تاجروں کا ایک بہت مختصر گروہ ایسا بھی ہے جس نے اس ہڑتال میں شرکت نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

رپورٹ: تنویر شہزاد، لاہور

ادارت: ندیم گل

ملتے جلتے مندرجات