1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

لاہور خود کش حملے، دو دورجن سے زائد ہلاکتیں

لاہور میں آج وفاقی خفیہ ایجنسی کی بلڈنگ اور ماڈل ٹاوں میں کے علاقے میں دھماکوں میں دودرجن سے زائد افراد ہلاک ہوئے ہیں۔ جبکہ سو سے زائد زخمی ہیں۔

default

پاکستان کے صوبہ پنجاب کے صوبائی دارلحکومت لاہور آج ایک مرتبہ پھر دہشت گردانہ حملوں کا شکار ہوا ہے۔ آج ہونے والے خود کش حملے اس قدر شدید تھے کہ ان کی آواز میلوں دور تک سنائی دی۔ تازہ ترین اطلاعات کے مطابق ہلاک ہونے والوں کی تعداد بڑھ کر چوبیس سے زائد ہو گئی ہے ۔ اور 100 سے زائد افراد زخمی ہیں۔پہلا خود کش حملہ پاکستان کے خفیہ ادارے ، پاکستان انویسٹی گیشن اتھارٹی F I A کی بلڈنگ پر کیا گیا۔ اس وقت اس بلڈنگ میں چار مارچ کو نیول وار کالج پر ہونے والے خود کش حملے کی تفتیش جاری تھی اور اس سلسلے میں کئی فوجی افسران بلڈنگ میں موجود تھے۔ اس حملے میں FIA کے تیرہ اہلکار بیھی ہلاک ہوئے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق خود کش بمبار نے بارود سے بھری گاڑی بلڈنگ سے ٹکرا دی۔ دوسرا خود کش حملہ ماڈل ٹاون کے علاقے میں ہوا ۔
حملوں کے بعد لاہور کے ہسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کردی گئی۔ کئی زخمیوں کی حالت نازک بتائی جا رہی ہے۔ ماڈل ٹاون میں ہونے والے حملے کے بعد عوام سڑکوں پر نکل آئے اور صدر پرویز مشرف کے خلاف نعرے بازی کی۔

Audios and videos on the topic