1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

قطر کی حاکمیت کو کوئی خطرہ نہیں، جرمن وزیر خارجہ

جرمن وزیر خارجہ زیگمار گابریئل کے مطابق شدت پسند تنظیموں کو مالی مدد فراہم نہ کرنے سے متعلق ایک معاہدہ کرنے سے قطر اور خلیجی ممالک کے درمیان تناؤ اور سفارتی بحران ختم کیا جا سکتا ہے۔

جرمن وزیر خارجہ زیگمار گابریئل خلیجی ممالک کے تین روزہ دورے کے دوران اپنی پہلی منزل سعودی عرب پہنچ گئے ہیں، جہاں انہوں نے سعودی حکام سے ملاقاتیں کی ہیں۔ انہوں نے اس بات پر بھی زور دیا کہ خلیجی ممالک خطے کی ایک اہم طاقت ہیں اور انہیں آپس میں مل کر رہنا چاہیے۔

انہوں نے اس تاثر کو مسترد کیا کہ قطر کی حاکمیت کو کوئی خطرہ لاحق ہے۔ سعودی عرب کے بعد وہ متحدہ عرب امارات، کویت اور قطر بھی جائیں گے۔ برلن حکومت کا اصرار ہے کہ خلیجی ممالک کے اس بحران کو پرامن مکالمت کے ساتھ حل کیا جانا چاہیے۔

قبل ازیں سعودی عرب اور دیگر تین عرب ممالک نے قطر کو دی گئی مہلت میں اڑتالیس گھنٹوں کی توسیع کر دی ہے۔ مقامی میڈیا کے مطابق کویت نے یہ تجویز دی تھی کہ دوحہ حکومت کو تیرہ مطالبات پر عملدرآمد کے لیے دیے گئے الٹی میٹم میں اضافہ کیا جائے۔

 سعودی عرب، بحرین، متحدہ عرب امارات اور مصر  کا الزام ہے کہ دوحہ حکومت دہشت گردوں کو مالی تعاون فراہم کرتی ہے تاہم قطر ان الزامات کو مسترد کرتا ہے۔ سعودی عرب کا مؤقف تھا کہ اگر قطر مطلوبہ وقت میں یہ مطالبات پورے نہیں کرتا تو اس پر مزید پابندیاں عائد کر دی جائیں گی۔ عالمی طاقتیں قطر کے بحران کے حل کی کوشش میں ہیں۔